Stories


باس سے رومینس از پرنسزز عشا رانا

ہیلو دوستو. یہ میری پہلی کہانی ہے جس کی سچی بات ہے. یہ بات جب کی ہے جب میں نے اپنے باس سے پہلی بار چودي تھی. ویسے میرا نام روپالي ونجاني ہے. بات تب کی ہے جب میں نے میرا بيكم مکمل کر لیا تھا اور میں جاب تلاش کر رہی تھی. اور مجھے جےنپكٹ کے بیک پھیس جاب مل گیا. ویسے میں 21 سال کی ہو، رنگ گورا اور بدن بھرا ہوا، قد تقریبا 5.2 "ہے. میں ذات سے سندھی ہو. میرا پھگر 36-29-32 اور کپ سائیز ڈی ہے. میرے کالج میں شامل میں بڑی پھےمس تھی. میرے کالج میں شامل سارے لڑکے مجھے ایک بار ضرور دیکھتے تھے.    کام شروع ہونے کے بعد سب کچھ ٹھیک تھا پر کبھی کبھی مجھے نائٹ شفٹ ملنے لگی جو میرے پھیملی کو پسند نہیں تھی. میں نے ایک بار جاکے میرے باس سے بات کی. میرے باس کا نام سریش تھا وہ سات انڈین تھے. ان کی عمر 45 سے زیادا تھی. باس نے مجھ سے آرام سے بات کی پر وہ مجھے بات بات پر ٹچ کر رہے تھے. میں نے اس بات پر زیادا بھاو نہیں دیا. اب مجھے نائٹ شفٹ نہیں ملنے لگی. نےكسٹ ڈے سے میری سیٹ پوزشن بھی چینج ہو گئی میں سر کے پاس بیٹھنے لگی. سر کبھی کبھی مجھے ٹچ کرتے تھے پر میں ہمیشہ یہ سوچ کر میری شفٹ درست رہے ہمیشہ اگنور کر دیتی تھی. کچھ دنوں کے بعد ہماری پوری ٹیم ایک رےسرٹ پیر گئے پكنك پر. ہم تمام پول میں شامل ہو رہے تھے. میں جب چینج کر کر آئی تب سر وہاں آ گئے اور انہوں نے مجھے پرپوز کر دیا. میں شاک ہو گئی. مجھے نہیں سمجھ نہیں آ رہا تھا کی کیا كه. میں سر کو کچھ نہیں کہا اور وہاں سے چلی گئی. ویسے میرا بوائے فرینڈ تھا. اور سر میرے ڈڈ کی عمر کے تھے. اس دن میں نے پھریںڈس کے ساتھ کافی مستی کی. پكنك ختم ہو گیا اور نےكسٹ دے ہم پھیس آ گئے. میں نے نوٹيس کیا کی سر مجھ سے ناراض ہے. اب مجھے نائٹ شفٹ بھی ملنے لگی تھی. اب میرے پھیملی والے مجھے جاب چھوڑنے کے لئے کہہ رہے تھے. مجھے نہیں سمجھ نہیں آ رہا تھا کی میں کیا کرو. میں نے اپنے ایک فرینڈ سے پوچھا کی کیا میں کرو. اس نے کہا کی باس کو خوش رکھ کارپوریٹ کا یہی رول ہے. میں نے 2-3 دن کے بارے میں سوچا میں جاب چھوڑنا نہیں چاہتی تھی. میں نے بهوت سوچ کر باس کے پاس نےكسٹ دے گئی. میں نے ان سے پوچھا کی پكنك والے دن کیا سچ تھا کیا. انہوں نے کہا کی میں انہیں پسند ہو. مینے بھی انہیں ہا بول دیا. انہوں نے مجھے اگلے دن کے ساتھ میں شامل ٹائم سپےڈ کرنے کو بولا. مینے بھی ہا بول دیا. انہوں كبن میں شامل ہی مجھے پکڑ لیا. اور چومنے لگے ان کے ایک ہاتھ میرے مممو پر تھے. وہ کافی زور زور سے دبا رہے تھے. مجھے کافی ڈر لگ رہا تھا کیوکی یہ پھیس تھا کوئی دیکھ لے گا تو میری عزت خراب ہو جائے گی. میں نے سر کو روکا اور کہا یہاں نہیں یہ سےپھ نہیں ہے. انہوں نے پوچھا کب میں نے کہا میرے ويكلي آف والے دن. اسمے اب 4 دن تھے. تو سر نے کہا چلو کوئی مال تک چلتے ہے. تھوڑا گھوم لےگے. میں نے پی سی میں شامل كس لگایا اور ہم ایک قریبی مال میں شامل ہوگئے. ہم نے گاڑی بےسمےٹ میں شامل پارک کی پر جیسے ہی میں اتنے لگی سر نے مجھے گاڑی میں شامل ہی رہنے کو کہا.  میں سماج گئی تھی کی آج یہ گاڑی میں شامل ہی سب کرنے والے هےب سر نے مجھے چومنا شروع کر دیا. شروع میں شامل میں کچھ رےسپونسے نہیں دے رہی تھی. پر آہستہ آہستہ گرم ہونے لگی. مینے بھی انہیں چومنا شروع کیا ان کا ایک ہاتھ میرے چچے کو باہر سے اور ایک ٹاپ کے اندر سے دبا رہے تھے. آہستہ آہستہ انہوں نے میرے ٹاپ کو اچا کیا اور میرے چچے دبانے لگے. اب انہوں نے ٹاپ اترنا چاہا پر انکار کر دیا پر انہوں نے مجھے ٹاپ اتروا ہی دياب انہوں میرے برا کو کھول دیا. اور میرے كبوترو کو آزاد کر دیا. وو میرے چچے چوس رہے تھے وہ بھی جانورو کی طرح. مجھے بهوت درد ہو رہا تھا پر مزہ بھی آ رہا تھا. آہستہ آہستہ انہوں نے میرے جینس کے بٹن کو فون دیا اب وو مجھے جینس اترنے کو کہا. مینے کہا کی میں جینس کھول دوں گی پر اترگي نہیں. میں نے میرے جینس کھولا اور گھٹنو تب لے آئی اب وو میرے ایک چچے کو چوس رہے تھے اور ایک ہاتھ سے دوسرے چچے کو دبا اور دوسرے ہاتھ سے میری چوت میں شامل انگلی کر رہے تھے. میں پاگل ہو رہی تھی. میں نے ان کے پیںٹ کی کھول کر ان کے لیںڈ کو نکل دیا. ویسے ان کا لیںڈ زیادا بڑا نہیں تھا اور اس عمر میں شامل اس سے زیادا ہو بھی نہیں سکتا. میں نے ان کے لیںڈ کو مسلانا شروع کیا. انہوں نے مجھ کو سیٹ پیچھے کرنے کو کہا. میں سمجھ گئی تھی کی وہ اب مجھے چھوڑنے والے ہے. میں نے اپنی سیٹ کو پیچھے کی. انہوں نے اپنے لیںڈ کو میری چوت پر رکھا اور ایک ہی جھٹکے میں شامل اندر ڈال دیا. میری آہ نکل گئی. ویسے یہ میرا پهےلا جنسی نہیں تھا پر میں نے اتنے زیادا بار بھی نہیں کیا تھا. اور کار میں شامل خلائی کم ہونے سے درد زیادا ہو رہا تھا. انہوں نے اپنے جھٹکے تیز کر دیا اور میں پاگلو کی طرح چلا رہی تھی. شاید میں جنسی کو پهےلے بار ایںجاے کر رہی تھنهونے تقریبا 5 منٹ تیز جھٹکے مارے اس کے بعد وہ جھڑ گئے اور میں بھی. انهنے سارا پانی میری چوت میں شامل ہی ڈال دیا. اب وہ مجھے پیار سے چوم رہے تھے. مجھے بهوت اچھا لگ رہا تھا. مینے اپنے کپڑے پهےنے اور مال کے واش روم جا کر میری چوت ساپھ کی. اس کے بعد میں ہر آف والے دن سر کے ساتھ جاتی تھی. پر گاڑی کے جنسی جتنا کسی میں شامل مزہ نہیں آیا. 1 سال کے بعد میرا پروموشن ہو گیا. مجھے باس کی وفاداری کا انعام ملا تھا. اس کے بعد میں اپنے کئی باس سے چدی پر فرسٹ ٹائم کا ایکسپیرینس بهوت غضب تھا. میری کہانی پسند آئی تو پلیز کامیںٹ جرر کرے.

Posted on: 07:51:AM 14-Dec-2020


0 0 107 0


Total Comments: 0

Write Your Comment



Recent Posts


Hi friends i am Amit from Bilaspur.....


0 0 65 1 0
Posted on: 04:01:AM 09-Jun-2021

Main 21 saal kahu. main apne mummy.....


1 0 47 1 0
Posted on: 03:59:AM 09-Jun-2021

Hello friends, hi mein xyz ka regular.....


0 0 64 1 0
Posted on: 04:18:AM 10-Jun-2021

Jani so rah hai . raat der.....


0 1 51 1 0
Posted on: 03:52:AM 09-Jun-2021

Hello my desi friends im sania from.....


0 0 70 1 0
Posted on: 03:47:AM 09-Jun-2021

Send stories at
upload@xyzstory.com