Stories


نوکرانی پہ دل آ گیا از شاہ جی

میرا نام فیصل ہے اور میں پاکستان کے شہر وزیرآباد سے ہوں یہ تب کی بات ہے ۔جب میں 18 سال کا تھا۔ میرے گھر میں اک لڑکی کام کرنے آتی تھی۔ آس کا نام شمع تھااور آس کی عمر 20 سال تھی۔ وہ بئت خوبصورت تھی ۔اور آس کا جسم بھی بہت خوبصورت تھا۔ آس کا فگر 36۔28 ۔34 تھا ۔ میرے گھر والے شادی پر گیے تھے اور میں پییر کی وجہ سے نہی جا سکا۔ دن کے 11 بجے کا ٹائم تھا جب دروازہ کی گھنٹی بجی مئں باہر گیا تو وہاں شمع تھی مئں نے آسے نہی بتایا کے گھر میں کوئی نہی ۔اس لیے کے اس سے اچھا موقع شاید پھر نہ ملتا۔ جب وہ گھر کے اندر ا گی تو آس نے پوچھا ۔ بھائی جان گھر میں کوئی نہی ہیں؟ میں نے کہا کیوں میں تمھں دکھائی نہی دے رھا۔ آس نے کہا میرا مطلب آپ کی امی ابو اور باقی سب گھر والے کہا ہین ۔ تو میں نے کہا وہ سب تو شادی پر گیے ہیں۔ پھر کچھ دیر کے بعد میں نے شمع سے پوچھا ۔ تم کو پتا ہے شادی میں کیا ھوتا ہے ۔ میں کیا جانو میری کون سی شادی ہوئی ھے جو مجھے پتا ھو ۔ میں نے کہا ٹیھک ھے تم اپنا کام کرو میں اپنا کام کرتا ھوں ۔ پھر وہ میرے کمرے میں صفائی کرنے ائی میں تو پہلے ہی تیار تھا۔وہ جیسے ہی ائی میں نے جلدی سے کمرے کا دروازہ بند کر دیا ۔ آس نے کہا بھائی جان کیا کر رہے ھو تو میں نے کہا ۔ میں تمھے بتاتا ھو کے شادی میں کیا ہوتا ھے ۔ وہ بولی آپ رہنے دو مجھے پتا ھے کیا ھوتا ھے ۔ میں نے پوچھا کیا ھوتا ھے تو وہ بولی شادی میں میاں اور بیوی ننگے ھو کر کھیلتے ھیں ۔ تو میں نے کہا میں بھی تم سے کھیلتا ھوں تو وہ بولی نہں بھائی جان کوئی آ جائے گا ۔ میں نے کہا کوئی نہں ائے گا بس تم میرے پاس آو ۔ یہ کے کر میں نے آسے گلے لگا لیا اور آس کی گردن پر پیار کرنے لگا وہ بھاگنا چاہتی تھی پر مئں نے آسے زور سے پکر لیا ۔ پھر میں نے آس کے ہنٹوں پر پیار کیا جس کے 5 منٹ بعد آس نے رسپانس دینا شروں کیا ۔ مجھے اندازہ ھو گیا کے وہ تیار ھے۔ میں نے آس کی شرٹ آتارنے کے لیے زپ کھول دی جسے آس کے بٹرے بٹرے ممیں میرے سامنے تھے لیکن وہ باڈی میں تھے پھر میں نے باڈی کا ہک بھی کھول دی آآآآفففف آس کے لائٹ پنک نیپل میرے سامنے تھے۔ میں نے جلدی سے آس کا اک مما چوسنے لگا اور دوسرے کو ہات سے دبانے لگا 10 منت بعد میں نے آس کی شلوار بھی اتار دی۔ اس کی بہت پیاری چوت دیکھ کر تو میں پاگل ھو گیا ایسی چوت تو میں نے فلموں میں بھی نہں دیکھی تھی ۔ پھر میں نے اپنے کپرے آتارے تو شمع رونے لگی اور کہنے لگی بھائی جان پلیز مجھے کچھ نا کرو۔ مگر میں نے آس کی اک نا سنی اور اسے بیڈ پر لٹا دیا اور آس کی چوت کو چاٹنا شرو کر دیا پہلے تو وہ روتی رہی پھر اس نے آوازیں نکالنا شرو کر دی جیسے آآآآآآآآآآآآآآآآآآآآآآآآآآءءءءءءءءءٰٰٰٰٰٰٰٰٰٰٰٰٰٰ یی یی یی ییی میں بی اور زوور سے کرنے لگا ۔ آس کے بعد میں نے آپنا8انچ کا لمبا لن آس کے منہ میں دے دیا آس نے کچھ نا کہا اور آسے لولی پاپ کی طرح چوسنے لگی30 منٹ تک اسیے ہی چلتا رھا اور پھر میں آس کے منہ مے ہی فارغ ھو گیا جس سے آس کو آلٹی آ گی۔ پھر میں نے آسے گلے لگا لیا اور چومنے لگا جس سے میں پھر تیار ھو گیا۔ میں نے آسے کہا میری رانی اب میں تم کو چودوں گا تیار ھو جاو ۔آس نے کہا میں نے اپنا سب کچھ آپ کہ دے دیا ہیں بھائی جان جو چاھو کرو۔ مگر میری بھابھی نے بتایا ھے درد ھوتا ھے بس تم مجھے درد نا کرونا۔ میں نے کہا میری رانی کچھ نہں ھو گا بس تم دیکھتی جاو۔ میں نے اپنا لن آس کی چوت پر رکھا تو مجھے بہت مزا ایا آس کی چوت بہت گرم تھی میں نے اپنا لن اس پر رکھا اور ایک جھٹکا ماراتو میرا آدھا ٹوپا آس کے اندر چللا گیا لیکن شمع زورزور سے چیخنے لگی اور نکالنے کی کوشش کارنے لگی لیکن میں نے ایک اور جھٹکا مارا اور سارا ٹوپا اندر کر دیا ۔ اس کے بعد آس کو چومنے لگا اور 10 منٹ تک چومتا رھا آس کی انکھوں سے انسو نکل رہے تھے ۔کچھ دیر بعد میں نے آیک اور جھٹکا مارا تو ادھا لن اس کی چوت میں چللا گیا لیکن آس کے آگے مجھے ایک دیوار سی لگی میں سمجھ گیا کے یہ آس کی سیل ھے اور وہ پہلی بار چدوا رھی ھے ۔ تھوری دیر بعد مجھے لگا وہ نیچے سے حرکت کر راھی ھے یہ اشارہ تھا کچھ کرو میں نے 3 2 جھٹکے مارے تو میرا پورا 8 انچ لمبا لن آس کی چوت میں تھا۔اب وہ بھی رسپانس دے رہی تھی اور کہ راہی تھی۔ بھائی جان زور سے کرو مزا آ رھا ھے ۔ اور میں نے بھی اپنی رفتار تیز کر دی اس دوران وہ 3 بار فارغ ھو گی تھی مجھے لگا کے میں بھی فارغ ھونے لگا ھو تو میں نے شمع سے کہا شمع میں فارغ ھونے لگا ھو تمہارے اندر ہی ھو جاوں تو وہ بولی نہی میں نے تمہارا پانی پینا ھے تو میں نے اپنا لن آس کی چوت میں سے نکالا اور آس کے منہ مئں دے دیا تو وہ چوسنے لگی جس سے میں فارغ ھو گیا اب کی بار آس نے سارا پی لیا ایک قطرہ بھی باہر نہی جانے دیا ۔مین نڈھال ھو کر آاس کے اوپر گر گیا اور مجھے نیند آ گی ۔ جب میں جاگا تو وہ کچن میں تھی ۔میں نے پیچے سے آسے پکر لیا اور میں نے اک بار پھر آس کی چوت ماری پھر ھم نہایے اور وہ چلی گی۔ اب جب بھی موقع ملتا ھے ھم مزا لیتے ھیں.اور اب میں اس کی گانڈ مارنا چاہتا ھو

Posted on: 07:52:AM 14-Dec-2020


0 0 113 0


Total Comments: 0

Write Your Comment



Recent Posts


Hello Doston, Ek baar fir aap sabhi.....


0 0 19 1 0
Posted on: 06:27:AM 14-Jun-2021

Meri Arrange marriage hui hai….mere wife ka.....


0 0 15 1 0
Posted on: 05:56:AM 14-Jun-2021

Mera naam aakash hai man madhya pradesh.....


0 0 14 1 0
Posted on: 05:46:AM 14-Jun-2021

Hi friends i am Amit from Bilaspur.....


0 0 76 1 0
Posted on: 04:01:AM 09-Jun-2021

Main 21 saal kahu. main apne mummy.....


1 0 63 1 0
Posted on: 03:59:AM 09-Jun-2021

Send stories at
upload@xyzstory.com