Stories


لک اینڈ فک (کالو) از عرفان مانی

نامکمل کہانی ہے


وقاص پنجاب کے ایک چھوٹے سے زمیدار کا لڑکا تھا  وقاص کا باپ گندمی رنگ کا تھا اور ماں گوری چٹی تھی  جب وقاص کے دوسرے بھائی بہن پیدا ہوئے تو سب گورے تھے لیکن جب وہ پیدا ہوا تو اس کا رنگ سانولا تھا جس وجہ سے اس کا نام کالو پڑ  گیا کالو  نے 8 کلاس کا امتہان  دیا اور اچھے نمبرون سے پاس ہو گیا اس وقت اس کی عمر 14، 15 سال تھی کالو کا باپ کالو  کے اچھے مارکس دیکھ کر بہت خوش ہوا اور اس نے کالو کو پڑھنے کے لئے کراچی بھیج دیا
کراچی میں کالو کی ایک  خالہ رہتی تھی  وہ بہت امیراور پیسے والی  تھی جب اس نے کالو کی کراچی میں پڑھنے کی بات سنی تو اس نے کالو کو اپنے گھر میں رکھ لیا
 کالو کی خالہ  کی دو لڑکیاں فرحانہ نورینا  اور ایک لڑکا امار تھا
فرحانہ فرسٹ year کی سٹوڈنٹ تھی نورینا 9th میں تھی اور امار 5 کلاس میں پڑھ رہا  تھا
کالو کی خالہ کی ایک نانند بھی اس کے گھر میں رہتی تھی جس کا نام فضا تھا
فضا نے دو سال پہلے MA انگلش کر لی تھی اور نورینا کے سکول میں teaching کر رہی تھی
کالو کی خالہ نے کالو کا داخلہ نورینا کے سکول میں کروا دیا اور وہ سب کے ساتھ سکول آنے جانے لگا
کالو کی خالہ  کا گھر دو منزل تھا اور چھت پر دو روم تھے ایک باتھروم بھی تھا دوسری منزل پر کالو کی خالہ کی دیورانی رہتی تھی جس کا نام کرن تھا کرن کے دو بچے تھے ایک تین سال کی بیٹی حرا اور  ایک دودھ پیتا بیٹا ریحان
کالو کی خالہ کے گھر میں تین روم تھے ایک روم خالہ اور خالو کا  ایک روم فرحانہ اور نورینا کا اور ایک روم  فضا کا تھا گھر میں ایک بڑا سا ہال تھا جس کی ایک سائیڈ میں اوپن کچن تھا سب ہال میں بیٹھ کر کھانا کھاتے تھے اور TV دیکھتے تھے گھر میں ایک گیسٹ روم بھی تھا جس میں کالو سوتا تھاگیسٹ روم کے آگے  ایک کار پارکنگ تھی جس کی سائیڈ میں سیڑیاں تھی جو اوپر کی منزل پر جا رہی تھی
کالو کا خالو اپنے بھائی کے ساتھ ایک گارمنٹس فیکٹری چلاتا تھا دونوں بھائی صبح  10 بجے گھر سے نکل جاتے تھے  اور رات کو 12 بجے کے بعدگھر  واپس لوٹتے تھے
کالو ایک سمجھدار اور خوش مزاج  لڑکا تھا  ایک ہفتے میں ہی وہ سب سے گھل مل گیا اور گھر کے ایک فرد کی طرح رہنے لگا
کالو کی لائف ایک روٹین سے گزارنے لگی  وہ صبح ٹائم پر اٹھتا اور ناشتے کے بعد سب کے ساتھ سکول چلا جاتا واپس آ کر وہ  کچھ دیر آرام کرتا تھا  پھر اپنا  ہوم ورک کرنے بیٹھ جاتا تھا اس کے  بعد وہ فری ہوتا تھا اور زیادہ تر ٹائم موویز دیکھ کر گزارتا تھا کبھی کبھی خالہ اسے گھر کے چھوٹے موٹے کام بولتی یا بازار سے سودا سلف لینے بھیج دیتی تو وہ یہ کام ہنستے ہنستے کر دیتا تھا
 باقی سب کی بھی سیم روٹین تھی صرف فضا سکول سے آنے کے بعد کچھ دیر ریسٹ کرتی تھی پھر  کالونی کی کچھ لڑکیوں کو ٹیوشن پڑھانے چھت پر لے جاتی تھی یہ اس کی روز کی روٹین تھی
یہ سنڈے کے دن کی بات ہے اس دن چھٹی تھی کالو کی خالہ کے گھر میں ڈش انٹینا  تھا   کالو ہال میں بیٹھا تھا اور   tv  پر ایک مووی  دیکھ رہا تھا  گھر کی  ڈوربیل بجی  تو کالو نے جا کر دروازا کھولا سامنے ایک خوبصورت لڑکی کھڑی تھی کالو کا منہ اس لڑکی کی خوبصورتی دیکھ کر کھل گیا لڑکی بھی  کالو کا چہرہ دیکھنے لگی کالو سانولا  تھا لیکن اس کے نین نقش تیکھے تھے جو بھی اس کو دیکھتا تھا نظر نہیں ہٹا پاتا تھا وہ کافی پر کشش اور ہینڈسم تھا کالو کی آنکھیں کافی بڑی اور نشیلی تھی جو بھی اس کی آنکھوں میں دیکھتا تھا کھو سا جاتا تھا کالو کے face پر ایک انوکھی معصومیت تھی  کیوں کہ اس کا دل صاف تھا اور اسے ابھی دنیا کی ہوا نہیں لگی تھی
 کالو  منہ کھولے لڑکی کا face  تکنے لگا تو وہ  شرما گئ لڑکی نے  گھبرا کر  جلدی سے  اپنا دوبٹہ اپنے  چہرے کے آگے کر لیا لڑکی نے اپنا face ڈھکا  تو  کالو کو ہوش آ گیا
کالو شرمشار ہو گیا اور  بولا ۔جی کس سے ملنا ہے
لڑکی بولی ۔فضا  سے میں اس کی فرینڈ ہوں
لڑکی کی آواز بہت پیاری تھی
کالو لڑکی کے سامنے سے ہٹ گیا اور بولا ۔
اندر آ جائیں فضا باجی اپنے روم میں ہیں
لڑکی کالو کی سائیڈ سے گزری اور فضا کے روم کی طرف چلی گئی کالو واپس tv ہال میں آ کر بیٹھ گیا اور مووی دیکھنے لگا
لڑکی فضا کے روم کے دروازے پر جا کر رک گئی لڑکی نے دروازا کھولنا چاہا تو وہ اندر سے لاک تھا لڑکی نے دروازا کھٹکھٹایا اور فضا کے دروازا کھولنےکا انتظار کرنے لگی فضا  اپنے کمپیوٹر کے سامنے بیٹھی تھی اور کچھ کام کر رہی تھی وہ دروازے کی آواز سن کر چونک گئی اور پوچھا ۔کون
لڑکی  بولی ۔فضا دروازا کھولو میں سحر ھوں
سحر فضا کی بیسٹ فرینڈ تھی فضا سحر  کی آواز سن خوش ھو گئی اس نے جلدی سے روم کا دروازا کھولا اور سحر کے گلے لگ گئی دونوں ایک دوسرے سے مل کر بہت خوش ہو گئی  فضا  نے سحر کو روم
میں بولایا اور دروازا  اندر سے لاک کر دیا دونوں فضا کے بیڈ پر جا کر بیٹھ گئی
فضا نے سحر سے  ہنس کر پوچھا۔کیا حال ہے  کمینی تیرا  اتنے دن کہاں گم تھی
سحر ہسنے لگی اور بولی ۔سب بتاتی ھوں پہلے یہ بتا تیرے گھر میں یہ نیا لڑکا کون ہے
فضا بولی ۔میری بھابھی کا بھانجا ہے پڑھنے آیا ہے اب یہ ادھر ہی رہے گا
سحر بولی ۔بہت پیارا لڑکا ہے
فضا  ہنس کر بولی ۔اور کالا بھی ہے
 سحر ہنس  کر  بولی۔کچھ بھی ھو لڑکے میں کچھ تو  بات  ہے
فضا ہسنے لگی اور بولی ۔ اسے چھوڑ وہ ابھی بچہ ہے
 سحر ہستی ہوئی بولی ۔ لیکن اس کی آنکھیں مردوں والی ہیں اس سے نظر ملتے ہی میرے دل کی دھڑکنیں تیز ھو گئی تھی
فضا کو تھوڑی حیرانی ہوئی
فضا بولی ۔کیا سچ میں تیرے ساتھ ایسا ہوا
سحر کا face شرم سے ریڈ ھو گیا
سحر بولی ۔فضا میں مذاق نہیں کر رہی
فضا بولی ۔اچھا میں اس کو چیک کروں گی تو  بتا  تیرے رشتے کا کیا بنا
سحر کا منہ لٹک گیا اور بولی ۔کچھ نہیں بنا
فضا بولی ۔کیا مطلب
سحر بولی ۔کچھ نہیں یار لڑکے کی ماں کو میں پسند تو آئی لیکن میری عمر کا سن کر اس نے انکار کر دیا
فضا بولی ۔یہ تو بہت برا ہوا
سحر بولی ۔ہاں یار مجھے تو ایسا لگتا ہے کہ میں کنواری ہی مر جاؤں گی
فضا بولی ۔صبر کرو یار کوئی اچھا رشتہ مل جائے گا
سحر بولی ۔اب اور کتنا صبر کروں 25 کی ھو گئی ہوں گرمی اتنی چڑھی ہے کہ  دل چاہتا ہے کسی ک بھی ساتھ سو جاؤں
فضا ہسنے لگی اور بولی ۔بہت کمینی  ہے تو شرم نہیں آتی  ایسی باتیں کرتے ہوئے
سحر ہنس پڑی اور بولی ۔کیا کروں تو ہی  میری بیسٹ فرینڈ ہے تجھ سے ایسی باتیں share  نا کروں تو کس سے کروں
فضا  ہنس  کر بولی ۔ہاں یار یہ تو ہے
سحر ہنس  کر   بولی۔تو سنا تیری کہیں بات چلی یا نہیں
فضا کا منہ لٹک گیا اور بولی ۔وہی سناٹا ہے نا کوئی میرا رشتہ مانگنے آ رہا ہے اور نا ہی میرے گھر والے کسی سے بات چلا رہے ہیں
سحر نے فضا کی بات سن کر  ایک سرد آہ بھری پھر اس نے فضا کے خوبصورت چہرے پر ہاتھ پھیرا  اور قمیض کے اوپر سے اس کے دونوں بوبز دبا  کر شریر انداز میں  بولی۔ کیا فائدا ایسے حسن اور ایسی جوانی کا  جب کوئی چاہنے والا ہی نا ملے
فضا شرما گئی اس نے سحر کے ہاتھ اپنے بوبز سے جھٹک دیے اور بولی۔ نا کر یار کچھ کچھ ہوتا ہے
سحر نے اپنا ہاتھ فضا کی گود میں رکھا اور شلوار کے  اوپر سے اس کی چوت پر پھیرنے لگی وہ اپنی انگلیاں فضا کی چوت کے لبوں پر رگڑنے لگی اور بولی ۔کیا ہوتا ہے
فضا نے اپنا ہاتھ سحر کے ہاتھ پر رکھ لیا اور اس کا ہاتھ زور سے پکڑ کر اپنے ہاتھوں میں دباتی ہوئی بولی ۔جو تیرا حال ہے وہی میرا حال ہے  24 کی ھو گئی ھوں پھر بھی صبر کر کے بیٹھی ھوں پتا نہیں کب کوئی اچھا رشتہ آئے گا اور کب میری شادی ھو گی
سحر بولی۔ تو سکول میں کسی کو  سیٹ کیوں نہیں کر لیتی تجھ سے شادی نہیں کرے گا  کم از کم تیری گرمی تو کم کر دے گا
فضا ڈر گئی اور بولی ۔یہ تم کیا کہ رہی ھو پاگل تو نہیں ھو گئی ھو
سحر بولی۔ کیوں اس میں کیا برائی ہے آج کل تو ایسا عام ھو گیا ہے لڑکیاں بوئے فرینڈ کسی کو بناتی ہیں اور شادی کسی اور سے کرتی ہیں
فضا بولی ۔اگر ایسی بات ہے تو تم ایسا کیوں نہیں کر لیتی
سحر بولی۔ کیسے کروں مجھے تو گھر سے باھر نکلنے کی اجازت نہیں جاب کرنا تو بہت دور کی بات ہے لیکن تم تو اپنی آزادی سے تھوڈا بہت فائدہ اٹھا سکتی ھو
فضا بولی۔ کیسے اٹھاؤں  اس میں بہت خطرہ ہے میری ایک کولیگ کا ایک ٹیچر کے ساتھ چکر چلا تھا اور اس  نے اس کے ساتھ سیکس کر لیا تھا اس  حرامی نے یہ بات  سب کو بتا دی تھی بیچاری بہت بدنام ہوئی تھی اور جاب چھوڑ کر چلی گئی تھی
سحر بولی ۔یہ تو اس بیچاری  کے ساتھ  بہت برا ہوا آج کل تو کوئی بھروسے کے لائق نہیں
فضا بولی ۔اس لئے تو کہتی ھوں کہ یہ کام  مجھ سے نہیں ھو گا میرے گھر والوں کو میری ایسی ویسی کسی بات کا پتا چلا وہ تو مجھے جان سے ہی مار ڈالیں گے
سحرہسنے لگی اور  بولی ۔کہتی تو تم ٹھیک ھو  پتا نہیں کب ہماری شادیاں ھوں گی اور کب ہماری پیاس بوجھے گی
فضا بھی ہسنے لگی اور بولی ۔اچھا یہ باتیں چھوڑو یہ بتاؤ کیا پیو گی  چائے یاجوس
فضا بیڈ سے اٹھنے لگی تو سحر نے اس کا ہاتھ پکڑ لیا اور  ہنس کر بولی ۔تم یہ تکلف چھوڑو اور مجھے کوئی اچھی سی مووی دکھاؤ
فضا ہسنے لگی اور بولی ۔کون سی مووی
سحر نے فضا کو آنکھ ماری اور بولی ۔وہی مووی جس میں لوگ دو جسم ایک جان ھو جاتے ہیں
فضا نے سمائل  کی اور بولی ۔بہت کمینی ہے تو تجھے دیکھ کر ہی میں سمجھ گئی تھی کہ تو کس کام کے لئے آئی ہے
سحر مسکرا کر بولی۔ جب تو سب جانتی ہے تو اتنے نخرے نا دیکھا اور کوئی اچھی سی مووی چلا دے
فضا بولی ۔پہلے تیرے لئے کچھ لے آؤں پھر تیری یہ خواھش بھی پوری کرتی ھوں
فضا اپنے روم سے نکلی اور  کچن میں آ گئ
کالو ہال میں لیتا ھوا تھا اور مووی دیکھ رہا تھا فضا نے کالو کو دیکھا تو اسے سحر کی بات یاد آ گئی
فضا کالو کو دوسری نظروں سے دیکھنے لگی اور اپنا کالو کے ساتھ موازنہ کرنے لگی
فضا ایک  خوبصورت اور  میچور لڑکی تھی اس کا face صاف اور رنگت آئس جیسی تھی  ٹیچنگ کے شعبے میں ہونے کی وجہ سے فضا  کی ڈریسنگ  شاندار  تھی وہ  ہمیشہ ٹائٹ سوٹ پہنتی تھی جس میں اس کی کمر اور بوبز ہمیشہ کسے رہتے تھے اور  گاند پیچھے سے  نظر آتی رہتی  تھی   فضا  کا قد 5 فٹ 6 انچ تھا اور اس  کے بوبز 34 کے تھے فضا کی  کمر کا گھیرا 26 اور کولہوں کا سائز 30 تھا  فضا کی صحت اچھی  تھی اور اس  کا جسم بھرا بھرا تھا  لیکن قد لمبا ہونے کی وجہ سے وہ کافی سمارٹ دیکھتی تھی
کالو بھی ایک صحت مند لڑکا تھا اور اس کا قد بھی فضا سے کچھ کام نہیں تھا اس کے face میں مردانہ وجاہت تھی لیکن رنگت میں وہ فضا سے مار کھا گیا تھا
فضا یہ سب باتیں سوچ رہی تھی اور کالو کو دیکھ رہی تھی
کالو فضا کے جذبات  سے انجان مووی دیکھ رہا تھا مووی دیکھتے ہوئے کالو  کے face پر بچوں جیسی معصومیت پھیلی ہوئی تھی جو  اس کے چہرے سے چھلک رہی تھی  فضا نے اپنا اور کالو کا موازنہ کیا تو اسے اپنی عمر اور پرسنلٹی  دیکھ کر خود سے  شرم آنے لگی
فضا نے سحر کی بات کو اگنور کیا اور خود کو کوسا کہ وہ کالو کے بارے میں یہ کیا اول فول سوچ رہی ہے
فضا نے چاے کا برتن چولہے پر ر رکھا اور کالو کو آواز لگائی کالو فضا کی آواز سن کر چونکا اور بولا ۔جی مم
فضا بولی۔ چائ پیو گے
کالو بولا ۔جی مم
 فضا سکول میں  کالو کی ٹیچر تھی کالو فضا کی بہت عزت کرتا تھا وہ   فضا کو کبھی باجی تو کبھی مم بولاتا تھا
فضا چائ بنانے لگی اور کالو مووی دیکھنے لگا البتہ اس نے وولیم کم کر لیا
 تھوڑی دیر بعد سحر فضا کے روم سے نکلی اور اس کو ڈھونڈتی ہوئی  ہال میں آ گئی اس نے پہلے فضا پھر کالو کو دیکھا اس کے قدموں کی آہٹ سن کر کالو نے اس کو دیکھا کالو کی نظر سحر سے ملی تو کالو  کو شرم آ گئی کالو نے اپنا سر جھکا لیا اور نیچے دیکھنے لگا  کالو سے نظر ملتے ہی سحر کے دل کی دھڑکن تیز ھو گئی اس نے کالو سے نظر چرائی  اور کچن میں چلی گئی
فضا سحر کو دیکھ کر بولی۔ تم کیوں آئی میں خود چائ بنا کر لے آتی
سحر فضا کے قریب کھڑی ھو گئی اس نے فضا کو آنکھوں سے کالو کی طرف اشارہ کیا  اور ہولے سے بولی ۔یہ بات چوڑو مجھے تو لگتا ہے کہ یہ لڑکا کبھی میری جان لے کر رہے گا
فضا نے کالو کو دیکھا اور بولی۔ کیوں اس بیچارے کے پیچھے پڑی ھو وہ تم سے کیا کہ رہا ہے
سحر بولی ۔پتا نہیں کیا بات ہے وہ جب  بھی مجھے دیکھتا ہے میرے دل کی دھڑکن تیز ھو جاتی ہے
فضا بولی۔ وہ مجھے بھی تو دیکھتا ہے مجھے تو ایسا کچھ فیل نہیں ہوتا
سحر بولی۔ اچھا لیکن میرے ساتھ ایسا کیوں ہوتا ہے
فضا نے smile کی اور بولی ۔کیوں کہ تمھارا خیال آج کل کہیں اور ہے
سحر نے بھی سمائل کی اور بولی۔ وہ تو ھمیشہ ہوتا ہے
دونوں چپ ھو گئی اور چائ بنانے لگی سحر بار بار  کالو کو دیکھنے لگی
فضا بولی۔ اسے دیکھنا بند کرو ورنہ اس کو شک ھو جائے گا
سحر بولی۔  مجھے لگتا ہے اس لڑکے پر میرا دل آ گیا ہے
فضا بولی ۔شرم کرو اپنی عمر دیکھو اور اس کو دیکھو
سحر بولی ۔وہی دیکھ رہی ھوں کوئی تو بات ہے جو میرا دل بار بار اس کی طرف کھچا جا رہا ہے
فضا بولی۔ لگتا ہے کہ آج تمہارے سر پر کچھ زیادہ ہی  گرمی چڑھ گئی ہے
سحر بولی۔ تم چاہے جو سمجھو کچھ تو ہوا ہے
اتنے میں فضا نے چائ بنا لی اور بولی ۔چلو باقی باتیں روم میں چل کر کریں گے
فضا نےتین کپوں میں چائ ڈالی اور ایک کپ سائیڈ میں رکھ کر کالو سے  بولی ۔کالو چائ بن گئی ہے اپنا کپ لے جاؤ
کالو فضا کی بات سن کر بولا۔ جی مم
فضا نے اپنی چائ اٹھائی اور سحر کے  ساتھ اپنے روم میں چلی گئی
روم میں آ کر فضا نے سحر کو چائ دی اور روم کا ڈور اندر سے لاک کر دیا فضا نے اپنی چائ لی اور کمپیوٹر کے سامنے بیٹھ گئی
فضا نے سحر کو ہنس کر دیکھا اور پوچھا ۔اب بولو کون سی مووی دیکھنی ہے
سحر فضا کے قریب ھو کر بیٹھ گئی اور بولی ۔کوئی نئی مووی لگاؤ جو میں نے نا دیکھی ھو
فضا ہنس کر  بولی ۔ایسی تو کوئی مووی نہیں ہے میرے پاس
سحر  بولی ۔تو کوئی آن لائن دیکھا دو
فضا کے روم میں wi fi تھا وہ آن لائن ہوئی اور اس نے  ایک سیکس ویبسائیٹ کھول لی جس میں دنیا بھر کی موویز آ گئی
فضا سرچ کرنے لگی اور موویز کی پکچرز کو اوپر نیچے کرنے لگی سحر یہ سب غور سے دیکھ رہی تھی ایک پکچر میں ایک لڑکا بیڈ پر سو رہا تھا اور ایک لڑکی اس کے بیڈ کی سائیڈ میں کھڑی تھی سحر وہ پکچر دیکھ کر فضا سے بولی ۔یہ  مووی چلا دو
فضا نے سحر کو دیکھ کر  سمائل کی اور مووی پلے کر دی دونوں چائ پینے لگی اور مووی دیکھنے لگی
مووی شروع ھو گئی
ایک لڑکا بیڈ پر سو رہا تھا اس کی آنکھیں بند تھی اور اس نے کمبل اپنے شولڈرز تک اوڑھا ہوا تھا  لڑکے کا منہ بیڈ کی ایک سائیڈ میں تھا اور دوسری سائیڈ میں اس کی بیک تھی
لڑکے کی بیک کے پیچھے ایک لڑکی کھڑی ہوئی تھی اور جھک کر لڑکے کے فیس   کو دیکھ رہی تھی لڑکی بہت خوبصورت اور کریم جیسی سفید تھی اس نے ایک چھوٹی سی برا پہنی ہوئی تھی جس میں سے اس کے آدھے سے زیادہ ممے نظر آ رہے تھے لڑکی کی کمر اور پیٹھ ننگی تھی اس کا  سارا پیٹ نظر آ رہا تھا لڑکی نے نیچے صرف ایک چھوٹی سی سکرٹ پہنی ہوئی تھی جس سے اس کی آدھی سے زیادہ ٹانگیں ننگی نظر آ رہی تھی
لڑکی کچھ دیر لڑکے کا فیس دیکھتی رہی جب اسے اطمینان ھو گیا کہ لڑکا سو رہا ہے تو وہ اس کے اوپر جھک کر کھڑی  ھو گئی اور اپنے ہاتھوں سے کمبل پکڑ کر ہولے ہولے لڑکے کے اوپر سے  سرکانے لگی
فضا اور سحر یہ سین دیکھ کر ایکساٹیڈ   ہونے لگی دونوں نے چائ ختم کی اور کپ ایک طرف رکھ دئے
لڑکی نے کمبل اوپر اٹھایا تو نیچے سے لڑکے کا جسم نظر آنے لگا لڑکا ننگا سو رہا تھا اور اس کا مرجھایا ہوا لن اس کی ٹانگوں کے بیچ میں لٹک رہا تھا
لڑکی نے کمبل ایک سائیڈ میں رکھ دیا اور جھک کر لڑکے کا لن دیکھنے لگی لڑکی لڑکے کا لن دیکھ کر خوش ھو گئی اور اس نے اپنی ایک انگلی اپنے دانتوں میں دبا لی
لڑکے کا مرجھایا ہوا لن دیکھ کر فضا اور سحر کی دل کی دھڑکنیں تیز ھو گئی اور وہ دونوں  لڑکے کے لن  کو غور دیکھنے لگی
لڑکی کچھ دیر لڑکے کا لن دیکھ کر خوش ہوتی رہی پھر وہ لڑکے کا فیس دیکھتی ہوئی اس کی پیٹھ کے پیچھے لیٹ گئی
لڑکی نے ڈرتے ڈرتے لڑکے کو پیچھے سے اپنی باہوں میں بھر لیا اور اس سے چپک کر لیٹ گئی لڑکا  گہری نیند میں تھا اور اسے پتا نہیں تھا کہ لڑکی اس کے ساتھ کیا کر رہی ہے
لڑکی ہولے ہولے لڑکے کے شولڈرز پر کس کرنے لگی اور اس کے جسم پر ہاتھ پھیرنے لگی لڑکی بار بار لڑکے کا فیس بھی دیکھ رہی تھی اور ڈر بھی رہی تھی کہ لڑکا جاگ نا جائے
جب لڑکا لڑکی کی حرکتوں سے ٹس سے مس نا ہوا تو لڑکی کا حوصلہ بڑھ گیا لڑکی نے لڑکے کے فیس پر نظر رکھتے ہوئے اپنا ایک ہاتھ نیچے کیا اور لڑکے کا لن پکڑ لیا
یہ سین دیکھ کر فضا اور سحر کی سانسیں تیز ہو گئی  اور ان کی چوتیں گیلی ہونے لگی
لڑکی ہولے ہولے لڑکے کے لن پر ہاتھ پھیرنے لگی اور اپنی مٹھی میں بھر بھر کر دبانے لگی تو کچھ دیر بعد لڑکے کا لن کھڑا ھو گیا اور زور زور کے جھٹکے مارنے لگا لڑکے کے جسم میں ہلچل ہوئی اور وہ سیدھا ھو کر لیٹ گیا لڑکی ڈر گئی اور لڑکے کا لن چھوڑ کر اسے خوف بھری نظروں سے دیکھنے لگی
  لڑکے کے جسم میں حرکت ہوتے ہی  فضا اور سحر چونک گئی دونوں ڈر گئی کہ لڑکی کا کام خراب نا ھو جائے
لڑکی کچھ دیر خوف سے لڑکے کا فیس دیکھتی رہی لڑکا اپنی آنکھیں بند کر کے  سوتا رہا تو  لڑکی نے راحت کی سانس لی اور اس کا لن پکڑ کی کھیلنے لگی
لڑکے کا لن  کھڑا ہوا تھا اور بار بار جھٹکے مار رہا  تھا  لڑکی پیار پیار سے لڑکے کے لن پر ہاتھ پھیر رہی تھی  اور  اسے اپنی مٹھی میں بھر بھر کر دبا رہی تھی
کچھ دیر بعد  لڑکی  لڑکے کے لن پر جھکی اور اس  پر کس کرنے لگی
فضا اور سحر بہت غور سے لڑکی کو لن پر کس کرتے  ہوئے دیکھ رہی تھی ان کو  مزہ آ رہا  تھا  اور ان کی چوتیں اور گیلی ھو رہی تھی
سحر بولی ۔ہاے کاش اس لڑکی کی جگہ میں ہوتی
فضا بولی۔ چپ کرو کمینی  ایک دن اپنا بھی ٹائم آے گا
سحر بولی۔فضا  بہت پیارا لن ہے اس لڑکے کا اگر مجھے مل جائے تو کچا کھا جاؤں گی
فضا ہنس پڑی اور  بولی ۔ کھاؤ گی تو چوت میں کیا لو گی
سحرہسنے لگی اور  بولی۔ پہلے کھاؤں گی پھر چوت میں لوں گی
فضا بولی۔ اچھا اب زیادہ بک بک نا کرو اور  مووی دیکھو
لڑکی کچھ دیر لڑکے کے لن پر کس کرتی رہی پھر اس نے اپنا منہ کھولا اور لڑکے کا لن اپنے منہ میں  بھر بھر کر چوسنے لگی
 یہ سین دیکھ کر فضا اور سحر  کے لب خشک ھو گئے اور وہ اپنے لبوں پر زبان پھیرنے لگی
لڑکی کچھ دیر لڑکے کا لن چوستی رہی تو لڑکے کا لن لڑکی کے منہ کے تھوک  سے جڑ تک  گیلا ھو گیا اور چمکنے لگا
لڑکی نے لڑکے کا گیلا لن دیکھ کر ایک سیکسی سمائل کی اور اس کی رانو پر چڑھ کر بیٹھ گئی
لڑکی نے اپنے گھٹنے  لڑکے کی کمر کے دونوں طرف رکھے اور  اپنے گھٹنوں پر کھڑی ھو گئی
لڑکی نے اپنی سکرٹ اوپر کی تو نیچے سے اس کی  ننگی گاند اور چوت نظر آنے لگی لڑکی نے پینٹی نہیں پہنی ہوئی تھی  لڑکی نے اپنے منہ میں ہاتھ ڈال کر اپنی کچھ فنگرز کو گیلا کیا اور اپنی چوت پر اپنا تھوک لگانے لگی
فضا اور سحر یہ سین دیکھ کر بہت ایکسایئڈیڈ  ھو گئی اور اپنے ہاتھ  اپنی رانوں میں  دبا کر بیٹھ گئی
لڑکی اپنی چوت پر تھوک لگانے ک بعد نیچے جھکی اور اس نے لڑکے کا لن ہاتھ سے پکڑ کر سیدھا کھڑا کر لیا لڑکی نے اپنی چوت لڑکے کے لن کی کیپ پر جمائی اور اپنی چوت اس پر دبانے لگی لڑکے کا لن آہستہ آھستہ لڑکی کی چوت میں جانے لگا لڑکی کو مزہ آنے لگا  لڑکی نے اپنی آنکھیں بند کر لی اور لڑکے کا لن  اپنی چوت میں لینے  لگی
 یہ سین دیکھ کر فضا اور سحر کی چوت میں پانی آنے لگا اور وہ  ہولے ہولے اپنی اپنی چوت پر ہاتھ پھیرنے لگی
 فضا اور سحر لڑکی کو اپنی چوت میں لن لیتے دیکھ کر انجوائے کر رہی تھی اور اس مزے کو فیل کر رہی تھی جو وہ  لڑکی لے رہی تھی
 لڑکی لڑکے کے لن پر اپنی چوت دباتی رہی جب لڑکے کا لن جڑ تک اس کی چوت میں گھس گیا تو وہ رک گئی
لڑکی نے ایک گہری سانس لی اور لڑکے کے سینے پر  ہاتھ رکھ کر ہولے ہولے   اپنی چوت اس کے لن پر اوپر نیچے کرنے لگی
لڑکے کی آنکھ کھل گئی اور وہ لڑکی کو حیرت سے دیکھنے لگا
لڑکا  بولا ۔what are you doing
لڑکی لڑکے کی آواز سن کر ڈر گئی اس نے اپنی آنکھیں کھول کر لڑکے کو دیکھا اور بولی ۔i like you
لڑکے نے سمائل کی اور  کروٹ بدل کر لڑکی کو بیڈ پر لیٹا دیا  اور خود اس پر چڑھ کر لیٹ گیا
لڑکے نے لڑکی کی آنکھوں میں دیکھا اور پوچھا ۔you really like me
لڑکی نے لڑکے کے گلے میں باہیں ڈال لی اور  بولی ۔yes i really like you
لڑکے نے لڑکی کو اپنی باہوں میں  بھر لیا اور کس کرنے لگا
فضا بولی۔اف اب مزہ آئے گا
سحر بولی۔  اب تو یہ لڑکا  اس کی  پھاڑ ڈالے گا
فضا  بولی۔ پھاڑنے دو دیکھو تو سہی دونوں کو کتنا مزہ آ رہا ہے
دونوں چپ ھو گئی اور مووی دیکھنے   لگی
لڑکی لڑکے کا ساتھ دینے لگی لڑکا لڑکی کو کس کرنے لگا اور اس کے بوبز دبانے لگا پھر  لڑکا نیچے ہوا اور اس نے لڑکی کی برا سے اسکے  دونوں بوبز باھر نکال لئے
لڑکی کے دونوں ممے بہت خوبصورت تھے اور ان کے نپل پنک کلر کے تھے
لڑکا لڑکی کے بوبز دیکھ کر پاگل ھو گیا وہ اس  کے دونوں بوبز دبانے لگا اور ان کے نپلز پر کس کرنے لگا لڑکی کو مزہ آنے لگا  اور وہ آہیں بھرنے لگی
لڑکا کچھ دیر لڑکی کے دونوں بوبز دباتا رہا اور ان پر کس کرتا رہا پھر وہ لڑکی کے دونوں بوبز اپنے منہ میں بھر بھر کر چوسنے لگا
یہ سین دیکھ کر فضا اور سحر کی سانسیں  تیز ھو گئی اور ان دونوں کی چھاتیاں اکڑ گئی
لڑکا کچھ دیر لڑکی کے دونوں بوبز چوستا رہا پھر وہ نیچے ہوا اور لڑکی ک پیٹ پر کس کرنے لگا
لڑکی کی آنکھیں بند تھی اور وہ لڑکے کے سر پر ہاتھ رکھ کر اس کی کسنگ کو انجوائے کر رہی تھی
لڑکا لڑکی کے پیٹ پر کس کرنے کے بعد اٹھا اور اس نے لڑکی کی سکرٹ اس کی ٹانگوں سے نکال کر بیڈ پر پھینک دی
لڑکی اب پوری ننگی ھو گئی تھی لڑکا لڑکی کی رانو پر ہاتھ پھیرنے لگا اور اس کی چوت کو دیکھنے لگا
لڑکی کی چوت بہت خوبصورت اور صاف  تھی اس کی چوت چھوٹی سی تھی اور اس کے لیپس جڑے ہوئے تھا
لڑکا لڑکی کی چوت پر جھکا اور کس کرنے لگا لڑکی لڑکے کے سر کے بالوں میں اپنی انگلیاں پھیرنے لگی اور  اس کا منہ اپنی چوت پر دبانے لگی
 لڑکے نے لڑکی کی چوت پر کس کرتے ہوئے  اپنی زبان منہ سے نکالی اور لڑکی کی چوت کے   لیپس پر پھیرنے لگا
یہ سین دیکھ کر فضا اور سحر کی چوت اور گیلی ہونے لگی اور وہ  دونوں اپنی اپنی چوت  پر ہاتھ  پھیرنے لگی
لڑکے نے لڑکی کی چوت کے لیپس کھولے اور اپنی زبان اس کی چوت کی لائن میں پھیرنے لگا
لڑکی کو مزہ آنے لگا اور وہ اپنی گاند اٹھا اٹھا کر اپنی چوت لڑکے کے
 منہ میں دبانے لگی
لڑکا کچھ دیر لڑکی کی چوت چوستا رہا پھر اٹھ کر بیٹھ گیا
لڑکی آنکھیں کھول کر لڑکے کو دیکھنے لگی اور سیکسی سمائل کرنے لگی
  لڑکے نے لڑکی کی ٹانگیں دونوں طرف پھیلا ئی اور اپنا لن ہاتھ سے پکڑ کر اس کی کیپ لڑکی کی چوت کے لیپس میں اوپر نیچے رگڑنے  لگا لڑکی کو مزہ آنے لگا اور وہ آہ آہ کرنے لگی لڑکے نے  اپنے لن کی کیپ لڑکی کے چوت کے سوراخ پر رکھی اور ایک دھکا مار کر اپنا پورا لن لڑکی کی چوت میں گھسا دیا لڑکی نے ایک درد بھری آہ بھری اور لذت سے سی سی کرنے لگی
لڑکا لڑکی پر لیٹ گیا اور لڑکی کو کس کرتے ہوئے اپنا لن اس کی چوت میں آگے پیچھے کرنے لگا
 تھوڑی دیر لڑکا اس پوزیشن میں لڑکی کو  ہولے ہولے چودتا رہا پھر اٹھ کر بیٹھ گیا اس نے لڑکی کی ٹانگیں پکڑ کر اس کے  پیٹ سے لگا دی اور زور زور سے دھکے مارنے لگا  لڑکے کے لن  اور لڑکی کی چوت سے پچ پچ کی آوازیں نکلنے لگی اور  دونوں کے جسم ٹکرانے سے تھپ تھپ ہونی لگی
فضا اور سحر سانسیں روکے یہ سین دیکھ رہی تھی اور ان دونوں کی چوتیں اور گیلی ھو رہی تھی
لڑکے نے کچھ دیر بعد پوزیشن بدلی اور لڑکی کو اپنے آگے ڈوگی سٹائل میں بیٹھا لیا لڑکے نے پیچھے سے لڑکی کی چوت میں لن ڈالا اور اس کو زور زور سےچودنے لگا
کچھ دیر بعد لڑکی تیز تیز سانسیں لینے لگی اور اپنی گانڈ ہلانے لگی پھر  اس نے ایک آہ بھری اور  اس کی چوت نے پانی چھوڑ دیا لڑکا بھی فارغ ہونے والا تھا اس نے لڑکی کی چوت سے لن نکال لیا اور مٹھ مارنے لگا لڑکے کے لن نے پانی چھوڑا تو اس نے وہ سارا لڑکی کی گانڈ پر ڈال دیا
مووی ختم ہو کر  اسٹاپ ھو گئی تو فضا اور سحر ایک دوسرے کا منہ دیکھ کر ہنس پڑی
مووی دیکھ کر دونوں گرم ھو گئی تھی دونوں کی چوت میں پانی بھر گیا تھا  اور دونوں کی چوتیں جل رہی تھی
فضا بولی۔ سحر مووی کیسی لگی
سحر بولی۔ مزہ آ گیا
پھر سحر بیڈ سے اٹھ کر کھڑی  ھو گئی اور ہنس کر بولی ۔مجھے تو بہت زور کی لگی ہے میں باتھروم جا رہی ھوں
فضا ہسنے لگی اور بولی۔ جلدی آنا پھر میں جاؤں گی
سحر نے ہاں میں سر ہلایا اور باتھروم چلی گئی
فضا کو بھی بہت زور کی لگی تھی اور بار بار اس کی چوت میں پانی آ رہا تھا سحر کے آنے تک فضا نے کمپیوٹر آف کر دیا پھر وہ بھی باتھروم چلی گئی
کچھ دیر بعد فضا اپنی چوت پر پانی مار کر آئی تو سحر نے اس سے پوچھا ۔فضا کب تک ایسا چلے گا ہمیں اس بارے میں کچھ سوچنا ھو گا
فضا بولی ۔کیا سوچیں شادی ھو گی تو سب ٹھیک ھو جائے گا
سحر بولی۔ مجھ سے تو  اور صبر نہیں ہوتا میں اب کسی مرد کے بغیر نہیں رہ سکتی
فضا بولی ۔کیا کرو گی
سحر بولی۔ کچھ سوچوں گی
پھر دونوں دوسری باتیں کرنے لگی دوپہر کا کھانا سحر نے فضا کے ساتھ کھایا اور گھر جانے کے لئے تیار ھو گئی
فضا اور  سحر  روم سے باھر آئیں تو سحر کی تیاری دیکھ کر  خالہ کالو  سے بولی ۔کالو سحر کو گھر  چھوڑ آؤ
کالو ہال میں بیٹھ کر  مووی دیکھ رہا تھا
کالو بولا ۔جی خالہ
کالو نے سحر کو دیکھا اور کھڑا  ھو گیا
کالو کو دیکھ کر سحر کی دھڑکن تیز ھو گئی اور وہ کالو کی خالہ سے  بولی ۔کوئی بات نہیں بھابھی میں اکیلی چلی جاؤں گی
خالہ بولی۔ کوئی ضرورت نہیں جب لڑکا گھر میں بیٹھا ہے تو اکیلے جانے کی کیا ضرورت ہے
سحر چپ ھو گئی فضا سحر کو دروازے تک چھوڑنے آئی تو کالو ان دونوں کے پیچھے چلنے لگا
سحر  فضا سے گلے ملی اور کالو کے ساتھ اپنے گھر کی طرف چل پڑی
 
سارے راستے  سحر چوری چوری کالو کو دیکھتی رہی اور سوچتی رہی کتنا پیارا لڑکا ہے اگر اس سے دوستی ھو جائے  تو مزہ آ جائے  پھر سحر کالو سے دوستی کرنے کی ترکیبیں سوچنے لگی
سحر  جو بھی ترکیب سوچتی اس میں پہل اسی کو کرنی پڑتی اور  جب پہل کرنے کی بات آتی تو سحر کالو اور اپنی عمر کے بارے میں سوچ کر ڈر  جاتی
سحر کو کبھی کالو سے دوستی کرنے کی ترکیب فضول لگتی لیکن جب اسے اپنی چوت کی گرمی یاد آتی تو وہ دوبارہ کالو سے دوستی کرنے کے بارے میں سوچنے لگ جاتی
سحر کا سارا راستہ انہی سوچوں میں گزر گیا اور اس کا گھر آ گیا
سحر نے  ڈور بیل بجائی تو اس کی امی نے دروازا کھولا  اور کالو کو دیکھ کر بولی۔یہ لڑکا کون ہے
سحر بولی۔ بھابھی کا بھانجا ہے مجھے گھر چھوڑنے آیا ہے
سحر کی امی کالو سے بولی۔ اچھا بیٹا اندر آ جاؤ چائ پی کر جانا
کالو بولا ۔تھنکس آنٹی میں گھر جاتا ہوں
سحر نے کالو کو گھور کر دیکھا اور بولی ۔پہلے چائ پی لو پھر چلے جانا
کالو  ڈر گیا اور بولا ۔ٹھیک ہے باجی میں چائ پی کر جاؤں گا
سحر نے سمائل کی اور بولی ۔امی آپ چائ بنائیں میں لینے آ جاؤں گی
سحر  کا گھر ڈبل سٹوری تھا اور وہ اوپر کے ایک روم میں رہتی تھی
سحر کالو کو اپنے روم میں لے گئی اور بولی ۔تم بیڈ پر بیٹھو میں چینج کر کے آتی هوں
کالو بیڈ سے ٹانگیں لٹکا کر بیٹھ گیا اور سحر باتھروم میں چلی گئی
سحر چینج کرتے کرتے سوچنے لگی کہ کالو سے دوستی کیسے کروں
سحر کے دماغ میں  بہت سے ترکیبیں آنے لگی لیکن جب وہ ان پر عمل کرنے کا سوچتی تو ڈر جاتی انہی سوچوں میں سحر نے چینج کر لیا اور باتھروم سے نکل آئی
کالو چپ چاپ بیڈ کے کنارے پر  بیٹھا تھا اور سحر کے روم کو دیکھ رہا تھا  سحر کالو  سے کچھ دور بیڈ پر بیٹھ گئی اور کالو کو دیکھنے لگی کالو نے ایک بار سحر کو دیکھا اور سر جھکا کر بیٹھ گیا
سحر سوچنے لگی کے کالو سے کوئی بات کروں لیکن اسے کالو سے بات کرتے ہوئے شرم آ رہی تھی اور  ڈر  بھی لگ رہا تھا کہ پتا نہیں کالو کیا سوچے گا
  کالو ایک مہمان کی طرح بیٹھا تھا اور چائ کا انتظار کر رہا تھا
کچھ دیر  سوچتے رہنے کے بعد سحر نے ہمت کی اور ڈرتے ڈرتے کالو سے پوچھا ۔ تمہارا  نام کیا ہے
کالو نے چونک کر سحر کو دیکھا اور سحر کا فیس دیکھ کر شرما گیا
 کالو  بولا ۔باجی میرا نام وقاص ہے
کالو کو شرماتے دیکھ کر سحر کی ہمت بڑھی اور اس کا ڈر کم ہو گیا
سحر بولی۔واہ  وقاص تو بہت اچھا نام ہے لیکن فضا تم کو کالو کیوں کہ رہی تھی
کالو اور شرمانے لگا اور بولا ۔باجی وہ میرا پیار والا نام ہے
سحر ہسنے لگی اور اسے کالو سے باتیں کرنے میں مزہ آنے لگا
 سحر کالو سے طرح طرح کے سوال پوچھنے لگی اور کالو شرما شرما  اس کی باتوں کا جواب دینے لگا
تھوڑی دیر میں سحر کالو سے فری ہو گئی لیکن کالو کی شرم کم نا ہوئی وہ بڑی عزت اور احترام سے سحر سے  بات کرتا  رہا
سحر کالو سے باتیں کرتے ہوئے آگے  بڑھنے کے بارے میں سوچنے لگی لیکن اسے کوئی مناسب ترکیب نہیں سوجھ رہی تھی
سحر کی امی کی آواز آئی تو وہ اٹھ کر نیچے چلی گئی سحر کی امی نے چائ بنا لی تھی سحر چائ لے کر اوپر آ گئی
سحر روم میں داخل ہوئی تو کالو نے اس کا فیس دیکھا اور شرما کر سر جھکا لیا
سحر ایک خوبصورت لڑکی تھی اس کی آنکھیں بڑی  اور  گال کشمیری سیبوں جیسے تھے جن سے خون ٹپکتا تھا
سحر  کی ہائیٹ پانچ فٹ تین انچ تھی اس کی صحت اچھی تھی لیکن وہ  موٹی نہیں  تھی
سحر بھی کراچی کی دوسری لڑکیوں کی طرح فٹنگ والے سوٹ پہنتی تھی جس میں اس کے چھتیس کے ممے اور چھبیس کی کمر کسی رہتی تھی سحر کی گانڈ اس کے جسم کے حساب سے  کافی  بڑی تھی اور پیچھے سے صاف  نکلی ہوئی  نظر آتی تھی
 سحر کو اپنے جسم کے نشیب و فراز کا پتا تھا اور اسے اپنی خوبصورتی پر ناز تھا لیکن کالو کو سحر کے لال لال  گال اور سمائل کرتا ہوا فیس بہت اچھا لگتا تھا وہ جب بھی سحر کا فیس دیکھتا تھا اس کو شرم آ جاتی تھی
سحر  کالو کو شرماتے دیکھ کر سوچنے لگی کالو مجھے دیکھ کر  اتنا کیوں شرماتا ہے ضرور دال میں کچھ کالا ہے
سحر یہ سوچتی ہوئی کالو کے پاس بیٹھ گئی اور اس نے ایک چائ کا کپ کالو کو دے دیا
کالو نے کپ لے لیا اور چائ پینے لگا
سحر چائ پینے لگی اور  بولی ۔کالو ایک بات پوچھوں
کالو بولا ۔کیا بات  باجی
سحر بولی ۔تم مجھے دیکھ کر شرماتے کیوں ہو
کالو کو چپ لگ گئی وہ کچھ دیر سوچتا رہا پھر بولا ۔پتا نہیں باجی
سحر کو ایک موقع ملا اس نے اپنا منہ کالو کے کان کے قریب کیا اور  ہولے سے بولی ۔میں تم کو کیسی لگتی ھوں
کالو ان باتوں میں اناڑی تھا لیکن کسی انجانے  خوف سے اس کے دل کی دھڑکن تیز هو گئی وہ چپ رہا اور اس نے سحر کی بات کا کوئی جواب نا دیا
کالو کو چپ دیکھ کر سحر سمجھ گئی کہ اس کا تیر ٹھیک نشانے پر لگا  ہے
سحر کی ہمت اور بڑھی اور وہ کالو کے نزدیک هو کر بیٹھ گئی
ساحر نے چائ کا کپ بیڈ پر رکھ دیا اور اپنا منہ کالو کی طرف کر لیا
سحر نے ہولے ہولے اپنے ممے کالو کے بازو  سے لگاے اور اپنی ایک ہاتھ  کالو کی پیٹھ کے  پیچھے سے گھوما کر اس  کے دوسرے کندھے پر یوں رکھ لیا جیسے وہ اس کا بہت قریبی  دوست  ہو
سحر نے اپنا چہرہ کالو کے منہ کے سامنے کر لیا اور اپنا دوسرا ہاتھ کالو کی گود میں رکھ کر بیٹھ گئی
سحر کالو کی ران پر  اپنا  ہاتھ پھیرنے لگی اور اپنی انگلیاں اس کے لن کو لگانے لگی
سحر  کالو کی آنکھوں میں دیکھنے لگی اور بولی ۔بولو کالو میں تم کو کیسی لگتی ہوں
سحر کا فیس اپنی آنکھوں کے سامنے دیکھ کر کالو کی بولتی بند هو گئی
کالو سے اتنے دوستانہ انداز میں آج تک کسی لڑکی نے بات نہیں  کی تھی اور نا ہی کوئی لڑکی اس کے اتنے قریب ہوئی تھی  جتنی قریب ہونے کی سحر کوشش کر رہی  تھی
 کالو کے لئے یہ سب کچھ نیا  نیا اور بہت عجیب تھا
کالو کے ناک میں  سحر کے جسم کے بهینی بهینی خوشبو آنے لگی اور وہ سحر کے مموں کا لمس اپنے بازو پر محسوس کرنے  لگا
کالو کو سحر کا ایسا کرنا بہت اچھا اور پیارا لگنے لگا لیکن جب کالو نے اپنی ران پر سحر کا ہاتھ اور لن پر سحر کی انگلیاں  محسوس کی تو اس کے  جسم  میں چیوٹیاں رینگنے لگی اور اس کا مرجھایا ہوا  لن کھڑا ہونے لگا
کالو گھبرا گیا  اور اس  نے اپنی دونو  ٹانگیں زور سے بند کر لی کالو نے اپنا لن رانو میں دبا لیا تو سحر کا ہاتھ بھی اس کی رانو میں پھس گیا
کالو سے  سحر کی بات کا  کوئی جواب نا دیا گیا اور وہ چپ  رہا
سحر کالو کو چپ دیکھ کر شیر هو گئی اور اس نے کالو کے لن کی حرکت محسوس کر لی
سحر  کے دل کی دھڑکن تیز هونے لگی  اور اس کی چوت گیلی ہونے لگی
سحر کو  تھوڑا تھوڑا ڈر لگنے لگا لیکن وہ ہاتھ میں آیا ہوا شکار  اتنی آسانی سے جانے نہیں دینا چاہتی تھی
سحر نے تھوڑی ہمت کی اور کالو کا لن پکڑ لیا
کالو سحر کی دلیری دیکھ کر ڈر گیا اور اس نے سحر کا ہاتھ پکڑ لیا
کالو بولا ۔باجی پلیز ایسا نا کریں یہ غلط بات ہے
سحر نے کالو کا لن اپنے مٹھی میں بھر لیا اور ہولے ہولے دبانے لگی
سحر کو گرمی چڑھنے لگی اور وہ کالو کو ڈانٹ کر  بولی ۔کوئی غلط بات نہیں تم   چپ  رہو
کالو  ڈر گیا اور سحر کو ایسا کرنے سے روک نا سکا
سحر آرام آرام سے کالو کے لن پر ہاتھ پھیرنے   لگی  کالو  کا لن فل کھڑا  هو گیا اور جھٹکے مارنے لگا
پندرویں سال میں ہی کالو کا لن چھ انچ لمبا اور دو انچ موٹا هو گیا تھا
کالو کا اتنا بڑا لن پکڑ کر سحر پاگل سی ہو گئی اور مٹھ مارنے لگی  سحر کو ایسا کرنے میں مزہ آنے لگا اور وہ کالو کے لن سے کھیلنے لگی
 سحر کے ایسا کرنے سے کالو کی حالت خراب ہو رہی  تھی اس کو مزہ آ رہا تھا اور اس کے لن میں سرور بھری ٹیسیں اٹھ رہی تھی
کچھ دیر میں کالو کا لن ہارڈ  هو گیا اور پھٹنے لگا
 کالو سے ضبط رکھنا مشکل ہو گیا تو اس نے  سحر کا ہاتھ زور سے پکڑ لیا اور بولا ۔باجی پلیز بس کریں ورنہ میرا پانی نکل جائے گا
 سحر کالو کی سخت گرفت اپنے ہاتھ پر  محسوس کر کے ڈر گئی اور اس نے کالو کا لن چھوڑ دیا
کالو کو سحر سے بہت شرم آنے لگی اور  وہ کھڑا هو  گیا
کالو بولا ۔اچھا باجی میں گھر جا رہا ہوں
کالو نے سحر کے جواب کا انتظار نا کیا اور اس کے روم سے نکل آیا
کالو جلدی سے  سیڑھیاں اتر کر سحر کے گھر سے نکلا اور باھر آ گیا
 
سحر کالو کے روم سے جاتے ہی پریشان ھو گئی  وہ تو بہت کچھ سوچ کر بیٹھی تھی اسے پتا نہیں تھا کہ کالو  چکنی مچھلی کی طرح  اس کے ہاتھ سے پھسل  جائے گا
سحر کے سر سے سیکس کا بھوت اترا تو اسے یہ ڈر ستانے لگا کہ کالو گھر جا کر یہ بات سب کو نا  بتا دے
سحر کی ٹینشن بڑھ گئی اور وہ سوچنے لگی  کہ اب کیا ھو گا
سحر کو جب کوئی حل نا سوجھا تو اس نے  اپنے پرس سے موبائل نکالا اور فضا کو کال کر  دی
سحر نے جب فضا کو ساری بات بتائی تو وہ  بھی ڈر گئی
فضا کو سحر کی حماقت پر غصہ آنے لگا اور وہ  بولی ۔یار تم پاگل  تو نہیں ھو گئی  تم  نے کالو کے ساتھ  ایسا کیوں کیا
سحر بولی۔  بس یار میں تھوڑی بہک گئی تھی اس بار  بچا لو میں  دوبارہ  ایسی  غلطی نہیں کروں گی
فضا بولی ۔اچھا میں کچھ کرتی ھوں  تم ڈرو مت  کالو کے آنے کے بعد میں دوبارہ کال کروں گی
فضا  نے کال کٹ کی اور اپنے  روم سے باھر  نکل آئی اس وقت ہال میں کوئی نہیں تھا اور سب اپنے اپنے روم میں آرام کر رہے تھے فضا کو ماحول ساز گار لگا وہ  ہال میں بیٹھ گئی اور  کالو کا بیتابی سے  انتظار کرنے لگی
کالو سحر کے گھر سے نکلا تو بہت گھبرایا ہوا تھا اس نے سوچا بھی نہیں تھا کہ سحر اس کے ساتھ ایسا کرے گی
کالو  ایک شرمیلا  اور ڈرپوک سا لڑکا تھا  سحر کے گھر سے کچھ دور آ کر اس کی جان میں جان آئی
کالو  نے کبھی  سیکس نہیں کیا تھا لیکن اس نے اپنے دوستوں سے سیکس کے بارے میں سب سن رکھا تھا
 کالو کو سب پتا تھا کہ سیکس کیا ہوتا ہے اور کیسے کرتے  ہیں
کالو  چاہے جتنا بھی شرمیلا  اور ڈرپوک لڑکا  تھا لیکن تھا تو ایک مرد ہی

Posted on: 06:12:AM 31-Dec-2020


0 0 384 0


Total Comments: 0

Write Your Comment



Recent Posts


Hello Doston, Ek baar fir aap sabhi.....


0 0 19 1 0
Posted on: 06:27:AM 14-Jun-2021

Meri Arrange marriage hui hai….mere wife ka.....


0 0 15 1 0
Posted on: 05:56:AM 14-Jun-2021

Mera naam aakash hai man madhya pradesh.....


0 0 14 1 0
Posted on: 05:46:AM 14-Jun-2021

Hi friends i am Amit from Bilaspur.....


0 0 75 1 0
Posted on: 04:01:AM 09-Jun-2021

Main 21 saal kahu. main apne mummy.....


1 0 58 1 0
Posted on: 03:59:AM 09-Jun-2021

Send stories at
upload@xyzstory.com