Stories


مالک مکان کی بیٹی سے افیئر از یاسر خان 2355

نامکمل کہانی ہے

سلام دوستو. میں آج آپکو اپنی زندگی کا ایک حسین واقعہ بتانے جا رہا ہوں  میرا نام یاسر ہے میں  کراچی کہ علاقے شاہ فیصل کالونی میں رہتا ہوں یہ میری زندگی کا پہلا تجربہ بھی تھا اس واقعے نے مجھے بہت کچھ سکھایا. یہ سٹوری تب کی ہے جب میری عمر 23 سال تھی، آج سے تقریباً 4 سال پہلے کی بات ہے میری فیملی کے حالات شروع سے اچھے نہیں تھے میرے والد ایک پرائیویٹ کمپنی میں نوکری کرتے تھے میرے گھر میں میری والدہ والد اور ایک مجھ سے چھوٹا بھائی ہے جو اس وقت آٹھویں کلاس میں پڑھتا تھا میں نے میٹرک کے بعد آگے پڑھائی نہیں کی اور گھر کے حالات اچھے نہیں تھے تو میں نے اپنے گھر کے پاس ہی ایک موبائل فون کی دوکان میں کام کرنا شروع کردیا تھا ہم جس گھر میں رہتے تھے وہ کرائے کا مکان تھا جس میں ہمیں رہتے ہوئے 7سال ہوگئے تھے ہمارے مالک مکان اوپر کی منزل پر رہتے تھے اور ہم گراؤنڈ فلور پر. مالک مکان کی فیملی میں ایک انکل آنٹی اور ان کی تین بیٹیاں تھی. جسمیں سے بڑی بیٹی کی شادی کے 4 سال بعد طلاق ہوگئی تھے اور وہ اپنے 2 سال کے بیٹے کہ ساتھ اپنے والدین کہ گھر ہی رہتی تھی انکا نام صوبیہ ہے انکی عمر 28 سال تھی وہ  کافی خوبصورت اور سیکسی عورت ہے انکی اپنے شوہر سے معاملات کچھ اچھے نا تھے تو بات طلاق تک آگئی اور وہ اپنے گھر آگئی. دوسری بہن جسکا نام عظمیٰ ہے ان کی بھی شادی ہوگئی تھی اور وہ اپنے شوہر کے ساتھ دبئی میں رہتی تھی ہر سال بس ملنے آیا کرتی تھی بچوں اور شوہر کے ساتھ اور تیسری بہن اسکا نام حمیرا ہے وہ کالج میں پڑھتی تھی تینوں بہنیں بلا کی خوبصورت ہیں صوبیہ باجی جو سب سے بڑی ہیں انہیں سب گڑیا کہا کرتے تھے میں بھی گڑیا باجی ہی کہتا تھا ان کا کوئی بھائی نہیں تھا اور ان کے ابو جاوید انکل پی آی اے میں اچھے عہدے پر ہیں اور ان کی امی کافی اچھی عورت ہیں میری فیملی کا کافی خیال کرتے تھے انکل آنٹی، اکثر مکان کے کرائے میں دیر ہوجاتی تھی مگر وہ لوگ کبھی غصہ نہ. ہوتے اور کہا کرتے تھے آرام سے دے دینا کوئی جلدی نہیں جاوید انکل کے پاس پیسے کی کمی نہیں تھی انہیں اتنی پرواہ نہیں ہوتی تھی ان کے اچھے رویہ کی وجہ سے ہم بھی ان کا ہر طرح سے خیال کرتے تھے ان. کے گھر کے اکثر کام میں یا میرا چھوٹا بھائی مظہر کرتے تھے جیسے بازار سے سودا سلف لا دینا اور بھی چھوٹے موٹے کام وغیرہ. میرا ان کے گھر آنا جانا بھی گھر جیسا ہی تھا جاوید انکل اکثر گھر سے باہر ہی رہتے تھے انکی نوکری ہی ایسی تھی کی 2 2 دن وہ گھر نہیں آتے تھے چلیں آب آتے ہیں اصل کہانی کی طرف. یہ کہانی میری اور گڑیا باجی کے سیکس کی ہے جو کہ میں نے کبھی سوچا ہی نا تھا کے ہمارے بیچ یہ ہو جائے گا گڑیا باجی شادی سے پہلے بھی بہت سیکسی تھیں مگر شادی کے بعد اور بچہ ہونے کے بعد تو حد سے زیادہ ہی سیکسی ہو گئی تھیں مگر میں نے کبھی انکو اس نظر سے دیکھا نہیں تھا عمر میں بڑی تھیں میں عزت بہت کرتا تھا انکی. میں سیکس کے معاملے میں کچھ زیادہ ہی خطرناک تھا مگر کسی کو چودا نہیں تھا بس پورن فلمیں دیکھ کر اکثر مٹھ مارا کرتا تھا. مگر وہ بھی بہت کم ہی مگر دل بہت کرتا تھا کہ کسی کی چوت کہ مزے لوں مگر ڈرتا بھی بہت تھا مجھے سیکسی فلموں میں کچھ چیزیں بے انتہا پاگل کرتی تھیں جسمیں سب سے زیادہ چوت کو چوسنے والے سین سے میرا لنڈ بے قابو ہوجاتا میں ہمیشہ سوچتا کے لڑکی کو ایسا کیسا مزا آتا ہے چوت کو چوسنے سے کہ وہ بری طرح مچلنے لگتی ہے میں یہ کام ضرور کرنا چاہتا تھا اور سوچا ہوا تھا کہ جب بھی کبھی موقع ملا یا اپنی شادی ہوگی تو میں چوت تو ضرور چوسونگا. مگر میری یہ خواہش جلدی ہی پوری ہوئی تھی. اور یہ خواہش پوری کی تھی گڑیا باجی نے. خیر ہوا یوں کہ گڑیا باجی کی پاس اس وقت ایک سمارٹ فون تھا جو تھوڑا پرانا ہو چکا تھا اکثر ہینگ ہوجاتا تھا ایک دن انہوں نے مجھ سے کہا کہ میرا فون بہت تنگ کرنے لگا ہے واٹس اپ بہت ہینگ ہوتا ہے اسکو تم. پلیز دیکھ لو زرا تو میں نے انہیں بتایا کی اسکی میموری فل ہوجانے سے ایسا ہوتا ہے اپ آیک بار فورمیٹ کرواکے دیکھ لیں تو انہوں نے کہا کہ اس فون میں کافی ڈیٹا ہے وہ سب ڈیلیٹ ہو جیگا میں نے کہا جی ہاں ڈیٹا ڈلیٹ ہوگا تب انہوں نے کہا کے وہ کچھ پرسنل ڈیٹا کو کسی میموری کارڈ میں کوپی کرکے مجھے فون دے دینگی تب میں فورمیٹ کردوں میں نے کہا ٹھیک ہے جب آپ یہ کام کرلیں تب مجھے دے دیں. دوسرے دن انہوں نے مجھے بلایا اور اپنا فون دیا اور کہا کے میں نے ڈیٹا کوپی کرلیا ہے تم اس فون کو دوکان لے جاؤ اور ریفریش کرکے مجھے واپس دے دینا چنانچہ میں نے فون لیا اور اپنی دوکان آگیا کچھ دیر بعد دوسرے کاموں سے فارغ ہوکے میں نے فون آن کیا اور اور فورمیٹ مارنے ہی والا تھا کہ اچانک خیال آیا کے ایک بار فائل مینیجر اوپن کرکے دیکھ لوں کہیں کچھ رہے نا گیا ہو اسی دوران میری نظر واٹس اپ فولڈر پر پری جس میں کافی ڈیٹا موجود تھا.جب میں نے سینڈ آئٹم کے فولڈر کو اوپن کیا تو اس میں بہت ساری تصویریں موجود تھیں اور ان تصویروں کو دیکھ کر میں ایک دم ھکا بکا رہ گیا اس میں زیادہ تر گڑیا باجی کی ننگی تصویریں تھی جو انہوں نے کسی کو بھیجی تھیں اور ریسیو والے فولڈر میں بھی کچھ تصاویر تھیں جو ان کے ایک کزن کی تھیں جسکو میں بھی جانتا تھا اسکا نام فراز تھا وہ کویت میں رہتا تھا اور پہلے سے شادی شدہ تھا اور بچوں والا تھا مگر اسنے گڑیا باجی کو اپنی ننگی تصاویر بھیجی ہوئی تھیں اور زیادہ تر اپنے لنڈ کی تصویریں بھیجی تھیں اسکا لنڈ زیادہ موٹا نہ تھا اور نہ زیادہ لمبا تھا اس سے زیادہ بڑا اور موٹا لنڈ تو میرا تھا مجھے بہت حیرت ہوئی یہ سب دیکھ کر میں نے جلدی سے وہ تمام تصویریں اپنی پین ڈرائیور میں سیف کرلیں اور فون کو فورمیٹ کردیا اور فون کو ری چیک کرکے رکھ دیا رات کو جب میں گھر گیا تو گڑیا باجی نے فوراً فون کے بارے میں پوچھا تب میں نے انکو فون واپس دیا اور کہا کہ اب یہ بلکل ٹھیک چل رہا ہے آپ دیکھ لیں مگر اس میں آپکا کچھ ڈیٹا باقی رہ گیا تھا جو میں نے فورمیٹ کر دیا ہے وہ ایک دم. تھوڑا چونک گئی اور فوراً پوچھا کون سا ڈیٹا تو میں نے جان بوجھ کر بتایا کےواٹس اپ کا کچھ ڈیٹا تھا وہ تھوڑا گھبراتے ہوئے بولی کیا تم نے اوپن کرکے دیکھا تھا تو میں نے کہا کے میں تو بس فورمیٹ کر رہا تھا تو میری نظر پڑھ گئی تھی پر میں نے فوراً فون فورمیٹ کردیا تھا انکے چہرے پر کچھ پریشانی سی آگئی مگر وہ چپ چاپ اپنا فون لیکر چلی گئیں، ان کے جانے کے بعد میں سوچنے لگا کہ میں نے غلط کردیا انکو بتانا نہیں چاہیے تھا کہ میں نے ڈیٹا اوپن کیا تھا مجھے لگا میں نے غلطی کردی، خیر ایک دو دن یوں ہی گزر گئے مگر میں نے نوٹس کیا کہ گڑیا باجی مجھ سے نظریں نہیں ملا رہی ہیں، میں تھوڑا اور ڈر گیا کہ انکو یہ بات کچھ زیادہ بری لگ گئی ہے 2 دن مزید گزر گئے اور پھر مجھ سے رہا نا گیا تو میں نے گڑیا باجی کو واٹس اپ پر میسیج کر ہی دیا,

اور پوچھا کہ ایسی کیا بات ہو گئی ہے جو آپ مجھ سے بات نہیں کر رہی ہیں

تو انہوں نے تھوڑی غصہ والی آواز میں کہا کہ تم کو فون نہیں دینا چاہیے تھا ان سے غلطی ہوگئی ہے

تب میں نے معزرت کی اور بتایا کہ ایسی کوئی بات نہیں ہے میں نے جان بوجھ کر فولڈر اوپن نہیں کیا تھا غلطی سے ہوگیا تھا اور آپ پریشان مت ہوں میں یہ سب بھول گیا ہوں اور دوبارہ اس بارے میں کوئی بات نہیں کرونگا

تب انکو تھوڑا اطمینان ہوا، مگر وہ بار بار ایک بات پوچھنے لگی کہ تم نے کونسی تصویریں دیکھی تھیں میں یہ بات بار بار ٹالتا رہا مگر وہ پوچھنے لگی اور کہنے لگی کہ پلیز ایک بار بتادو بس انکے بہت اصرار پر مجھے بتانا ہی پڑ گیا کہ میں آپکی اور فراز بھائی کی ننگی تصاویر دیکھیں تھی یہ سنتے ہی وہ تھوڑا ہل گئی،،،،

اسکے بعد انکا کوئی میسج نہیں آیا اور میں کافی دیر تک انتظار کرتا رہا اور پھر دوسرے کاموں میں مصروف ہوگیا، اسی رات میں اپنے بستر پر لیٹا ہوا تھا رات کے 12 بج چکے تھے اور نیند نہیں آرہی تھے اچانک میرے فون پر مسیج آیا دیکھا تو وہ میسج گڑیا باجی کا تھا،

گڑیا باجی:  ہیلو یاسر، کیسے ہو

میں: جی باجی ٹھیک ہوں آپ بتائیں خیریت اتنی رات میں میسسج کیا سب ٹھیک ہے نا.

گڑیا باجی: ہاں سب ٹھیک ہے بس ایسے ہی نیند نہیں آرہی تھی تھوڑی پریشان ہوں میں بس.

میں: کیا بات ہے مجھے بتائیں باجی.

گڑیا باجی: یاسر مجھے تمہاری اس حرکت سے بہت برا لگا ہے تم کو ایسا نہیں کرنا چاہیے تھا میری پرائیویٹ پکس نہیں دیکھنی چاہیے تھی مجھے اس بات سے بہت تکلیف ہو رہی ہے تم میرے چھوٹے بھائی کی طرح ہو تم نے اچھا نہیں کیا میرے ساتھ.

میں: گڑیا باجی پلیز مجھے معاف کر دیں میں نے ایسا جان بوجھ کر نہیں کیا غلطی سے ہوا اگر مجھے اندازہ ہوتا ایسا کچھ ہوگا تو میں وہ فولڈر ہرگز اوپن نہیں کرتا پلیز معاف کردیں یہ بات میرے اور آپکے بیچ رہےگی میں کبھی کسی سے زکر نہیں کرونگا.

گڑیا باجی: میں تم پر کیسے بھروسہ کرلوں تم بچے ہو ابھی کسی سے مزاق میں بھی کہہ دیا تو میں تو بدنام ہو جاؤنگی نا.

میں: ایسا کبھی نہیں ہوگا آپ بھروسہ رکھیں باجی.

گڑیا باجی: ٹھیک ہے میں تم پر بھروسہ کر رہی ہوں مگر ایک بات اپنی امی کی قسم کھا کر بتاؤ تم نے میری کوئی بھی پکس کہیں اور تو سیف نہیں کی نا،

میں: تھوڑا ڈر گیا پر اپنی امی کی جھوٹی قسم کھا لی اور کہا نہیں میں نے ایسا کچھ نہیں کیا ہے،

گڑیا باجی: اچھا ٹھیک ہے بس اب میری ٹینشن کم ہوگئی ہے جو کچھ ہوا سب بھول جانا تم پلیز.

میں: ٹھیک ہے باجی اچھا اگر آپکو برا نا لگے تو ایک بات پوچھوں آپسے.

گڑیا باجی: ہاں پوچھو،

میں: فراز بھائی کیا آپ سے شادی کرنا چاہتے ہیں،

گڑیا باجی: نہیں نہیں ایسا کچھ نہیں ہے بس ہم دوست ہیں فراز تو پہلے سے شادی شدہ ہے میں کیوں اس سے شادی کرونگی وہ میرا کزن ہے ہم دونوں بس اپنی اچھی بری بات ایک دوسرے سے شیئر کر لیتے ہیں اور کچھ نہیں یے،

میں: اچھا باجی سوری میں نے بس ایسے ہی پوچھا تھا آپ دونوں پکس میں کافی ایک دوسرے کے قریب لگے تو مجھے لگا کہ شاید وہ آپسے شادی کرنا چا ہتے ہیں،

گڑیا باجی:نہیں ایسا کچھ نہیں ہے بس وہ بھی کویت میں اکیلا رہتا ہے تو اکثر ہماری فون پر چیٹ ہوجاتی ہے ہم دونوں ایک دوسرے سے کافی کلوز ہیں بس، اور تم یہ کیوں پوچھ رہے ہو

میں: کچھ نہیں باجی ایسے ہی بس پوچھا تھا اچھا آپ آرام کرلیں اب چھوڑیں سب باتوں کو.

گڑیا باجی: اوکے تم بھی سو جاؤ پھر بات ہوگی. خدا حافظ.

اور پھر میں گڑیا باجی کے بارے میں سوچتے ہوئے سوگیا. دوسرے دن سے وہ ہی روٹین کے کام چلتے رہے اور دن گزر گیا رات ہو گئی اور میں بستر پر لیٹا گڑیا باجی کے جسم کو یاد کرتےہو اپنا لنڈ مسل رہا تھا ایک عجیب سا مزہ آرہا تھا کیا جسم تھا انکا قد میں مجھ سے لمبی تھی پتلا جسم بھاری بریسٹ اور تھوڑی موٹی سی گانڈ رنگ گورا تھا ہونٹ بڑے سیکسی اور رسیلے تھے میں جتنا سوچتا لنڈ اتنا کڑک ہو رہا تھا اور میں زور سے مسلنے لگا اتنے میں فون بجا اور انکا ہی میسج آیا. لکھا تھا،

سلام یاسر کیسے ہو،

میں نےکہا ٹھیک ہوں آپ کیسی ہو اور آپ سوئی نہیں اب تک.

نہیں مجھے نیند نہیں آرہی تھی بس ڈر سا لگ رہا تھا اس لیے تم کو میسج کردیا.

کیسا ڈر باجی

کچھ نہیں بس ایسے ہی، اچھا کیا کر ہے تھے

کچھ نہیں باجی بس سونے جارہا تھا نیند نہیں آرہی کچھ ہے جو بار بار دماغ میں آرہا ہے

ایسا کیاہے بھئی. جو سونے نہیں دےبرہا تم کو.

کچھ نہیں باجی

نہیں مجھے بتاؤ تم پلیز

ارے ایسا کچھ نہیں ہے آپ سو جاؤ

نہیں تم کو قسم ہے بتاؤ مجھے ایسا کیا ہے جو تم سو نہیں پا رہے ہو

باجی آپ قسم نہ دیاکریں پلیز میں بس آپکے بارے میں ہی سوچ رہا تھا اسی لیے نیند نہیں آرہی تھی

میرے بارے میں ایسا کیا سوچ رہے تھے

باجی وہ جب بھی آنکھ بند کرتا ہوں آپکی پکس سامنے آجاتی ہے بس یہ ہی وجہ ہے

دیکھا مجھے اسی بات کا ڈر تھا تم یہ سب بھولوگے نہیں اب تو تم نے میری پریشانی اور بڑہا دی ہے مجھے اب تم سے ڈر لگ رہا ہے بھئی.

ارے نہیں باجی میں بھول جاؤں گا بس کچھ ٹائم تو لگےگا نہ دراصل میں نے کبھی بھی کسی لڑکی کو اس حالت میں نہیں دیکھا تھا میرے لیے یہ سب تھوڑا نیاہے

جھوٹے انسان ایسا کیسےہو سکتا ہےتم نے کبھی کسی اور کو نہ دیکھا ہو

میں سچ بول رہا ہوں اپ جسکی چاہیے قسم لےلیں

نہیں آج کل ایسا ممکن نہیں انٹرنیٹ کا دور ہے آج کل کے تو بچے بھی بہت ہوشیار ہوگئے ہیں تم نے کیسے نہیں دیکھا کسی لڑکی کو.

باجی میرا مطلب تھا کہ پکس اور ویڈیوز تو دیکھی ہیں مگر وہ سب عورتوں کو ہم جانتے تھوڑی ہیں آپ کو تو میں جانتا ہوں اسلیے تھوڑا عجیب لگ رہاہے


کیوں تمہاری کوئی گرل فرینڈ نہیں ہے کیا

نہیں نہیں باجی ایسی کوئی گرل فرینڈ نہیں ہے بس اسکول کی کچھ فرینڈ ہیں مگر وہ بھی بس نارمل بات چیت ہوتی ہے میں نےکبھی کسی سے اس طرح کی بات نہیں کی


اچھا ٹھیک ہے بھئ چلو اب سو جاؤ مجھے نیند آرہی ہے بعد میں بات ہوگی یہ بول کر وہ تو چلی گئی مگر میرا لنڈ حد سے زیادہ بے چین ہوگیا میں فوراً باتھ روم گیا اور مٹھ لگائ اور واپس بستر پر آکر سوگیا. اب کافی دنوں سے روز رات کو میری اور گڑیا باجی کی چیٹ ہونے لگی یہ سلسلہ روز چلنے لگا ہم دونوں کافی اچھے دوست بن گئے اور کافی باتیں شیئر کرنے لگے.ایک رات چیٹ کرتے کرتے اچانک گڑیا باجی نے مجھ سے پھر وہ ہی سوال پوچھا کہ تمہاری کیا واقعی کو گرل فرینڈ نہیں تو میں نے کہا سچ میں نہیں ہے باجی میں ان سب میں پڑنے سے ڈرتا ہوں اور گرل فرینڈ بنانے کے لیے جیب میں بہت پیسے ہونے چاہیے

ہاں تم صحیح کہتے ہو آج کل لڑکیوں کو پیسے سے پٹایا جا سکتا ہے مگر ہر لڑکی ایک جیسی نہیں ہوتی ہے کسی کسی کو بس پیار چاہیے ہوتا ہے سچا والا

میں نے پوچھا سچا پیار کونسا ہوتا ہے باجی انہوں نے کہا کے وہ پیار جس میں پوری زندگی ساتھ جینے کا وعدہ ہو اور ایک دوسرے کو خوش رکھنے کے دونوں کچھ بھی کردیں

ہاں مگر ایسا پیا مر تو شادی کے بعد ہی ہو سکتا ہےنا باجی

نہیں ضروری نہیں ہے شادی سے پہلے بھی لوگ کرتے ہیں جیسے میں نے بھی کیا تھا احسن (اپنے ایکس شوہر) سے

ہاں تو پھر آپکی طلاق کیوں ہوئی

بس وہ لمبی کہانی ہے احسن کو دوسری لڑکیوں میں زیادہ دلچسپی تھی مجھ سے دور ہو رہا تھا وہ میرے پاس بھی بہت کم آتا تھا جب بھی مجھے اسکی نیڈ ہوتی وہ منع کردیتا تھا اور جب خود کا موڈ ہوتا تو مجھے فوراً بلالیتا تھا


باجی کیا مطلب میں سمجھا نہیں کیسی نیڈ یعنی....


اف او ایک تو تم پورے بچے ہو سب کچھ بتانا پرےگا کیا،
ارے بھئی میں میاں بیوی والی نیڈ کی بات کررہی ہوں

او اچھا یعنی سیکس کی نیڈ

ہاہاہاہاہاہا ہاں بھئی پاگل لڑکے وہ  ہی سیکس والی نیڈ....


تو پھر اسی وجہ سےآپکی طلاق ہوگئ

نہیں اور بھی بہت ساری وجہ تھی مگر سب سے بڑی وجہ یہ ہی تھی کہ اسکو میرے سے اب زیادہ مزہ نہیں آتا تھا وہ بار بار یہ کہتا رہتا تھا حالانکہ کے مجھ میں کوئی کمی نہیں ہے

جی باجی آپ صحیح کہہ رہی ہو آپ کے اندر کوئی کمی نہیں اتنی تو آپ خوبصورت ہو اتنا پیارا جسم ہےآپکا وہ پاگل آدمی تھا آپکی قدر نہیں تھی اسکو،

سچ میں تمہیں میں خوبصورت لگتی ہوں مگر میں تو اب پہلے جیسی نہیں رہی صائم کے پیدا ہونے کہ بعد میرا جسم کافی بدل گیاہے اسکو فیڈ کرانے کی وجہ سی میرا فگر کافی چینج ہوگیاہے،

نہیں باجی آپ بہت خوبصورت ہو اور آپکا جسم تو بہت ہی زبردست ہے مجھے تو آپکے بارے میں سوچنے سےہی کچھ ہونے لگتاہے

کیا پاگل ایسا کیا ہونے لگتا ہے بھئی

نہیں نہیں چھوڑیں بس میں نہیں بتا سکتا پلیز

نہیں اب تو تم کو بتانا پڑے گا ورنہ میں تم سے بات کرنا چھوڑ دونگی

ارے نہیں نا باجی پلیز رہنے دیں مجھے شرم آرہی ہے پلیز چھوڑیں

نہیں تم بتاؤ بس اور شرم. کیسی ہم. دوست بھی تو ہے نا یار چلو بتاؤ پلیز تم کو میری قسم،

ارے یار گڑیا باجی آپ بھی نا بس فل بلیک میل کر دیتی ہیں،

بتا رہے ہو یا میں آف لائن ہو جاؤں،

اچھا نہ بھئ بتا رہا ہوں میں جب بھی آپ کے بارے میں سوچتا ہوں تو نیچے پینٹ میں ھلچل ہونے لگتی ہے


ہاہاہاہاہاہاہاہاہااہا پاگل...

بھئ سچ بول رہا ہوں ایسا ہی ہوتا ہے

ہاہاہاہاہاہاہاہا ارے ھلچل کا کیا مطلب ہوتا ہے ٹھیک سے بتاؤ کیا ہوتا ہے

باجی بھئ میرے اس میں سختی آجاتی ہے وہ کڑک ہوجاتا ہے

ہاہاہاہاہاہاہاہاہااہا پاگل لڑکے اس میں کیا مطلب نام بتاؤ تم کس کی بات کر رہے ہو

نہیں باجی میں نام تو کبھی نہیں بتا سکتا بس آپ سمجھ جائیں پلیز مجھے بہت شرم آرہی ہے اس وقت

اچھا ٹھیک ہے مت بتاؤ نام.میں نہیں پوچھ رہی بس لیکن یہ بتاؤ جب تمکو ایسا ہوتا ہےتو تم پھر کیا کرتے ہو

کچھ نہیں باجی میں کیا کرونگا


جھوٹے سچ سچ بتاؤ مجھے سب پتہ ہے لڑکے کیا کرتے ہیں

کیا کرتے ہیں لڑکے آپکو کیا پتہ ہے بتائیں

نہیں میں نہیں بتارہی تم نے کونسی پوری بات بتائی

باجی بتائی تو ہے پوری بات جو محسوس ہوتا ہےآپکو بتا دیا

اچھا ٹھیک ہےبس زیادہ غصہ مت کرو یہ بتاؤ جب تمہارہ وہ جو بھی ہے جب سخت ہوجاتا ہے تو پھر تمہیں کیا دل کرتا ہے

آہ باجی پلیز نہ کریں بہت کچھ کرنے کو دل کرتا ہے مگر شرم آرہی ہے آپکے سامنے بولنے میں، اس وقت میرا دل بہت زور زور سے دھڑک رہا ہے...

ارے یاسر کیا ہوگیا تم کو دل کیوں زور سے دھڑک رہا ہے...

بس باجی  جب وہ سخت ہوتا ہے تو دل زور سے ڈھڑکنے لگتاہے....

کیا واقعی تو تمہارہ وہ کیا ابھی بھی سخت ہو رہا ہے...

ہاں باجی....

لیکن. ایسا کیوں ہورہا ہے ابھی...

آپکی باتوں سے ہوا ہے....

اووو سوری یار مجھے نہیں پتہ تھا ایسا ہو جائے گا...

کوئی بات نہیں باجی چھوڑیں...

اب کیا کروگے تم یار تمکو درد تو نہیں ہو رہا نہ...


ہاہاہا نہیں باجی یہ تو میٹھا سا درد ہوتا ہے جو اچھا لگتا ہے....

اوو اچھا چلو میں تم کو ایک چیز بتاتی ہوں جس سے تم کو سکوں ملے گا اور درد بھی ختم ہو جائے گا....

وہ کیا باجی بتائیں پلیز جلدی مجھے سکون چاہیے فوراً...

اچھا تم. ایک کام کرو اپنی پینٹ کی زپ کھولو اور اسکو باہر نکالو....

اف باجی تھوڑا عجیب لگ رہا ہےمجھے....

ابے پاگل کچھ نہیں ہوگا میں جو بول رہی ہوں چپ چاپ کرو تمکو بہت اچھا فیل ہوگا پھر....

اچھا کرتا ہوں رکیں زرا،،،،جی باجی نکال لیا باہر اب کیا کروں....

اب اسکو اپنے ہاتھ سے ہلکے ہلکے مسلو....

جی باجی مسل رہا ہوں اچھا لگ رہا ہے کافی....

ہمممم ایسا کرتے رہو تھوڑی دیر تک....

نہیں باجی تھوڑی دیر کرونگا تو اس میں سے پانی نکل جائگا....

ارے تو پاگل پانی نکالو اسکا پھر تمکو سکون ملیگا...


نہیں نا باجی میں اپنے بستر پر ہوں سب گیلا ہو جائے گا.....

افففففففف کیا بہت زیادہ پانی نکلتا ہے تمہارہ....

ہاں باجی بہت زیادہ نکلتا ہے......

افففففف یاسر تم نے تو میرا پانی نکلوا دیا ہے....

ہاہاہاہاہاہا سچ میں باجی آپکا بھی پانی نکلتا ہے آپ کا بستر خراب ہوگیا ہوگا نا اب....

چل نا پاگل،،، لڑکی کا اتنا نہیں نکلتا ہے اور جو نکلتا ہے وہ اندر ہی رہتاہے...

اوو اچھا مجھے تو آپکے سسٹم کا نہیں پتہ ہے نا....

اچھا یاسر ایک کام کروگے....

جی بولیں باجی....

تم اپنے اس کی پک لیکر بھیجو واٹس اپ پر.....


آووووو نہیں باجی مجھے شرم آتی ہے ہے میں نے ایسا کبھی نہیں کیا....

ارے کچھ نہیں ہوتا تم بھیجو تو سعی....

باجی کیسے بھیجوں کمرے میں لائٹ بند ہے بھائی سو رہا ہے نا....

ارےپاگل باتھ روم. میں چلے جاؤ نا دو منٹ کے لیے.....

باجی آپ کیا کرونگی اس کی پک دیکھ کر....

یار تم بھیجو تو صحیح ایک بار پھر ہم دونوں کا پانی برابر سے نکل جائے گا مجھے بھی سکون مل جائگا نہ پلیز بھیجو.....

اچھا دو منٹ روکیں میں جاتا ہوں باتھ روم میں.....

اس وقت میرا لنڈ آپے سے باہر ہو چکا تھا بڑی مشکل سے میں نے خود کو روکا ہوا تھا میری منی بلکل نوک پر تھی. پھر میں باتھ روم گیا اپنے لنڈ کی 3 پکس بنائی اور باجی کو بھیج دی. انہوں نے سین کرنے کے بعد 5 منٹ کوئی میسج نہ کیا. تب میں نے ہی انکو پوچھا کہ کیا ہوا تو انکا جواب آیا...

یاسر ایک بات بتاؤ یہ پکس تمہاری ہے یا انٹرنیٹ سے ڈاؤن لوڈ کرکے مجھت بھیجی ہے....

میں نے کہا باجی قسم لے لیں میری ہی ہے آپسے جھوٹ کیوں بولونگا....

نہیں مجھے یقین نہیں ہو رہا ہے کہ یہ تمہارہ ہی ہے....

یار باجی آپکی قسم میرا ہےبس.....

یار تم تو اتنے چھوٹے ہو پھر تمہارہ وہ اتنا بڑا کیسے....

پتہ نہیں باجی پر میرا ہی ہےیہ. اور اس وقت فل ٹائٹ ہورہا ہے....

یار تم نے اسکو دکھا کر میری حالت بہت خراب کردی ہے اب تم کچھ کرو پلیز ورنہ میں پاگل ہو جاؤنگی....


باجی میں کیا کروں بتائیں آپ....

تم نے کبھی لڑکی کے اندر ڈالا ہے سچ بتانا....


نہیں ڈالا آپکی قسم مجھے ہمیشہ ڈر لگتا ہے.....

اچھا تم نے فلموں میں تو دیکھا ہوگا نا کیسے ڈالتے ہیں....

ہاں ہاں باجی بہت بار دیکھا ہے....

ٹھیک ہے تم جلدی ایک کام کرو اوپر آؤ سیڑھیوں کے پاس...


باجی اوپر کیسے آؤں کوئی دیکھ نا لےاس وقت....


نہیں کوئی نہیں دیکھےگا،،، ابو ڈیوٹی پر ہیں امی دوائی کھاکے گہری نیند میں ہیں اور حمیرا بھی بے خبر سو رہی ہے. بس تم نیچے اپنی طرف دیکھ کر آجاؤ جلدی پلیز.....


اچھا باجی 5منٹ روکیں میں آتا ہوں...

جب اسنے مجھے اوپر آنےبکا کہا میں تو خوشی سے پاگل سا ہوگیا خیر میں جلدی سی چپ چاپ دبے قدموں سے نکل کر سیڑھیوں کی طرف بڑھا....

اصل میں ہمارے گھر میں ایک مین سیڑھیاں تھیں جو اوپر جانے کا راستہ تھا، ہمارہ دروازہ الگ تھا اور گڑیا باجی کا مین گیٹ الگ بیچ میں سیڑھیاں تھیں. خیر میں جلدی سے اپنے گیٹ سے ہوتا ہوا سیڑھیوں پر پہنچا اور دیکھا کی اوپر کا گیٹ تھوڑا سا کھلا ہوا تھا. گڑیا باجی گیٹ کےپیچھے کھڑی میرا ہی انتظار کر رہی تھیں انہوں نے مجھے فوراً اندر آنے کو کہا اور مجھے سیدھا اسٹور روم میں جانے کا اشارہ کیا. میں خاموشی سے اسٹور روم میں گیا اور ان کا انتظار کرنے لگا وہ 2 منٹ بعد ہی اندر آئی اور اسٹور کا گیٹ اندر سے بند کردیا میرا دل اتنا زور سے دھڑکنے لگا کہ جیسے ابھی باہر آجائے گا....


اسٹور روم کافی چھوٹا سا تھا اور سامان سے بھرا ہوا تھا اور بیٹھنے کی جگہ نہ ہونے کے برابر تھی
میں خاموشی سے دیوار سے ٹیک لگائے کھڑا تھا وہ پاس آئی اور کہا کیا ہوا ڈر لگ رہا ہے میں نے کہا ہاں باجی میرا دل بے قابو ہو رہا ہے.. تم ریلیکس رہو کچھ نہیں ہوگا...

اگر کوئی اٹھ کر اس طرف آگیا تو...

ارے یار کوئی نہیں آیگا، اچھا چھوڑو سب اسکو دکھاؤ کہاں ہے.....

ارے باجی وہ ڈر کے مارے سو گیا ہے....


ارے تم نکالو باہر وہ پھر اٹھ جائے گا میں نے فوراً اپنی پینٹ کی زپ کھولی اور اپنا لنڈ باہر نکالا جو خوف سے بلکل للی بن گیا تھا گڑیا باجی نے میرے لنڈ پر اپنا ہاتھ رکھا تو ایک دم. مجھے کرنٹ سا لگا اور لنڈ میں جان آنا شروع ہوگئی ایک منٹ میں ہی میرا لنڈ کڑک ہوگیا اور گڑیا کی آنکھوں میں عجیب خمارِ آگیا اسنے لنڈ کو سہلانا شروع کردیا اور میں بے قابو ہونے لگا میرا سیکس کی باتو‍ں سے ہی برا حال ہو چکا تھا میری منی پہلے ہی اوپر کی طرف تھی....

لنڈ کو فل کڑک حالت میں دیکھتے ہوئے گڑیا نے اپنی شلوار کو نیچے گرایا جو کی شاید الاسٹک والی تھی اور دیوار کی طرف منہ کرکے کھڑی ہوگئی اور نیچے کی طرف جھکنے لگی اور مجھے پیچھے آنے کو کہا میں پیچھے آگیا وہ آدھی نیچے جھک گئ تھی....


یاسر پیچھے سے اندر ڈالو جلدی مجھے کنٹرول نہیں ہو رہا ہے میں نے اپنا لنڈ اسکی چوت کی کی طرف کیا اور اندر ڈالنے کے لیے زور لگایا لنڈ کی ٹوپی ہلکی سےاندر گئ اسکی چوت پوری طرح سے پانی سے بھیگی ہوئی تھی بہت گیلی تھی میں نے خود کو تھوڑا سیٹ کیا اور ٹھیک سے لنڈ کو چوت کے برابر لایا اور زور لگا کر لنڈ کو اندر ڈالا تو ایک دم. میرا پورا لنڈ اسکے اندر چلا گیا وہ ایک دم. تھوڑا اچکی اور اسکے منہ سے ہلکی سی آہ نکلی. اور میرا لنڈ اندر گیا تو میرے اندر ایک عجیب طوفان آیا ایسا مزہ جو شاید لفظوں میں نہیں بتایا جا سکتا اس وقت ہم دونوں سیکس میں بری طرح سے گرم تھے کچھ سمجھ نہیں آرہا تھا ہم کیا کر رہے ہیں بس میں اپنے لنڈ کو اندر باہر کر رہا تھا اور وہ ہلکی ہلکی آوازیں مسلسل نکالتی جارہی تھیں میرا سیکس پورے جوبن پر تھا 8، 10 جھٹکوں میں ہی میری منی آنے لگی میں نے کہا میرا پانی آرہا ہے اس نے کہا اندر مت چھوڑنا اپنا پانی اور میں نے ایسا ہی کیا جیسے ہی میری منی آنے لگی میں نے اپنا لنڈ باہر نکال دیا اور پھچ پھچ میری منی نکل کر اسٹور کے فرش پر گرگئ......


ہم دونوں پسینہ سے شرابور ہو چکے تھے...

اس نے جلدی سے کسی کپڑے سے اپنی چوت کو صاف کیا اور پھر مجھے وہ کپڑا دیا کہ خود کو صاف کرو میں نے کپڑے سے لنڈ صاف کیا اور واپس گڑیا کو دے دیا اسنے فرش پر گری ہوئی میری منی کو صاف کیا اور مجھے زور سے گلے لگا لیا اور میرے گال پر ہلکی سی kissکی اور کہنے لگی تم ابھی تھوڑے کچے ہو تم کو تھوڑی ٹریننگ دینی پڑیگی،،،


کیوں کیا ہوا میں نے کیا کچھ غلط کردیا...


نہیں تم بہت جلدی فارغ ہو گئے کچھ دیر اور جھٹکے مارنے تھے. اچھا چلو تم جاؤ اب جلدی ہم میسج میں بات کریگے.....

میں جلدی سے اپنے کپڑے ٹھیک کیے اور باہر نکل کر سیدھا اپنے روم میں آکر لیٹ گیا....

یہ میری زندگی کی پہلی چدائی تھی جو اچانک سے ہوئی مگر ایسا مزہ آیا کہ میں آج تک نہیں بھولا. پہلی چدائی کا مزہ ہی نرالہ ہوتا ہے
اس رات میرے اور گڑیا باجی کے بیچ اچانک سے سیکس ہوا جس نے مجھے پاگل کرکے رکھ دیا یہ پہلا تجربہ تھا کہ میں نے اپنا لنڈ چوت میں ڈالا  اسنے ایسا مزہ دیا جو لفظوں میں بیان کرنا بہت مشکل ہے مانا کے بس میں کچھ منٹوں میں ہی فارغ ہوگیا تھا جس سے گڑیا باجی کی تسلی نہیں ہوئی تھی پر مجھے بڑا مزہ آیا میں واپس اپنے بستر پر آیا اور ایک سکون محسوس کرنے لگا جو آج سے پہلے کبھی نہیں ملا تھا اور ساتھ ہی سوچنے بھی لگا کہ میری منی اتنی جلدی چھوٹ گئ تھی اس کے لیے ضرور مجھے کچھ کرنا ہوگا یہ ہی سوچتے سوچتے میں کب سوگیا پتہ ہی نا چلا اور پھر دوسرا دن شروع ہوا میں اپنی دوکان پر کام میں لگ گیا قریب 12 بجے گڑیا باجی کا مسیج آیا


ہیلو یاسر کیسے ہو

جی باجی ٹھیک ہوں آپ کیسی ہو

ہاں ٹھیک تم بتاؤ رات نیند کیسی آئی تمہیں

ارے باجی مت پوچھیں میں تو بے خبر سویا اور اتنا سکون ملا کے بتا نہیں سکتا آپکو

ھمممممم... پر مجھے جو سکون چاہیے تھا وہ پوری طرح سے نہیں ملا پر کوئی بات نہیں تمہارہ فرسٹ ٹائم تھا نا،،، اب تم کو میں تھوڑا ٹرین کرونگی پھر تم مجھے ٹھیک سے پیار کرنا


ضرور باجی آپ جیسا کہیں گی میں ویسا ہی کرونگا
کیا آپکو بلکل مزہ نہیں آیا تھا

نہیں مزہ تو بہت آیا تم نے جب اندر ڈالا تو میری تو جان نکل گئی تھی تمہارہ وہ کافی بڑا ہے اور میری وہ جگہ چھوٹی ہوگئ ہے نا بہت ٹائم بعد سیکس کیا ہے میں نے،،، بس تم جب کر رہے تھے تو شروع میں تھوڑا درد ہورہا تھا مجھے اور جب کچھ جھٹکوں کے بعد مجھے مزہ آنے لگا تو تم نے پانی چھوڑ دیا...

باجی سوری مگر مجھے اتنا مزہ مل رہا تھا مجھے پتہ ہی نہیں چلا. ایک دم میرا پانی آنے لگا اپکی وہ جگہ بہت ٹائٹ ہے اور اتنی گیلی تھی آپنے کیا لگایا تھا اس میں

ھھھھھھھھہ پاگل کچھ نہیں لگایا تھا وہ پانی ہوتا ہے جو اندر سے آتا ہے جب لڑکی کو سیکس کی نیڈ ہوتی ہے تو خود بخود اس جگہ سے لیس دار پانی آنے لگتا ہے اور اسی پانی سے تو مزہ آتا ہے....


جی باجی صحیح کہا آپنے اس پانی کہ وجہ سے ہی میرا وہ آسانی سے اندر چلا گیا تھا

اچھا چھوڑو سب یہ بتاؤ تم کب فری ہوگے مجھے تم سےملنا ہے آج کسی بھی طرح میرے اندر ابھی بھی آگ سی لگی ہوئی ہے جس کو تم ہی ٹھنڈا کر سکتے ہو....

باجی آپ جب بولیں میں تو آجاؤگا میرا مسلہ نہیں ہے مگر یہ بتائیں کیسے ملینگے ہم گھر میں تو سب ہونگے میرے گھر میں تو ممکن ہی نہیں ہے امی اور مظہر ہوتے ہیں آپ ہی کچھ کریں نا اور میں دوپہر میں کھانا کھانے گھر آتا ہوں 1 سے لیکر 3 تک گھر ہی میں ہوتا ہوں اسی وقت کوئی سیٹنگ بنائیں نا.

 

ہاں مجھے پتہ ہے میں تمہارے گھر کا تو بول بھی نہیں رہی میں اپنے ہی گھر میں کوئی سیٹنگ بناتی ہوں اور تمکو میسج کرتی ہوں تم بس تیار رہنا اور فوراً آنا کیونکہ ٹائم کم ہوگا....


ٹھیک ہے باجی میں فوراً آجاؤگا...اسکے بعد میں کام میں مصروف ہوگیا اور سوچنے لگا کہ کیسے اب دوبارہ سے گڑیا باجی کی چوت کا مزہ لونگا....اسی سوچ میں کھانے کا ٹائم ہوگیا اور میں گھر کی طرف چل دیا گھر پہنچتے ہی میں باجی کو میسج کیا کہ میں گھر میں ہوں کھانا کھا رہا ہوں.

ٹھیک ہے یاسر تم کھانا کھاکر مجھے میسج کرو پھر میں تمہیں اوپر بلاؤنگی کسی بھی بہانےبسے تم فوراً آجانا...

او کے بجی میں ویٹ کرہا ہوں...


میں نے کھانا ختم کیا اور مسیج کیا کہ میں اب فری ہوں...

ٹھیک 5 منٹ بعد گڑیا باجی سیڑھیوں پر آکر میری امی کو آواز دینے لگی.. امی نے گیٹ کھول کر پوچھا کیا ہوا گڑیا..... ارے آنٹی یاسر ہے کیا نیچے اسکو زرا اوپر بھیج دیں میں کپڑوں کی مشین لگانے جارہی تھی تو دیکھا مشین کا پائپ نکلا ہوا ہے....یاسر کو پتہ ہے اسنے پہلے بھی ٹھیک کیا تھا.... اچھا گڑیا میں بھیجتی ہوں اسے....

یاسر جا بیٹا زرا دیکھ لے گڑیا کی مشین میں کوئی مسئلہ ہوگیا ہے جا کر ٹھیک کردے


اچھا امی دیکھتا ہوں جاکر.... میں فوراً تیزی سے اوپر کی طرف بڑھا... اصل میں گڑیا باجی کے گھر میں 3rd فلور بھی تھا جس میں دو کمرے تھے جہاں گھر کا کچھ سامان تھا جس میں زیادہ تر گڑیا باجی
کے جہیز کی چیزیں رکھی تھیں اور باقی جگہ اوپن تھی وہاں باتھ روم کے ساتھ واشنگ مشین. رکھی تھی اور وہ لوگ اس جگہ کپڑوں کو دھوکر وہیں پھیلا دیا کرتی تھیں میں اوپر پہنچا تو آنٹی(گڑیا باجی کی امی) کچن میں تھیں وہیں صائم بھی کھیل رہا تھا اور حمیرا شاید اپنے کمرے میں تھی...
آنٹی نے کہا یاسر بچے زرا چھت پر جاکر مشین دیکھ لے بیٹا گڑیا اوپر ہی ہے اسکو کپڑے دھونے ہیں بہت سارے جمع ہوگئے ہیں....

اچھا آنٹی میں ٹھیک کر دیتا ہوں یہ تو کوئی مسئلہ ہی نہیں ہے....

باجی کی امی کافی موٹی تھیں اوپر سے شوگر کی مریض تھیں تو زیادو تر گھر میں ہی رہتی تھیں ان سے سیڑھیوں سے چڑھا اترا نہیں جاتا تھا اور مجھے یہ پتہ تھا کہ آنٹی چھت پر تو نہیں آیگی.... خیر میں فوراً چھت پر گیا وہاں باجی میرا انتظار کر رہی تھی

آگئے یار اتنی دیر لگادی...

سوری باجی آنٹی نے پکڑ لیا تھا

بتائیں کیا کرنا ہے اب

تم کمرے میں چلو میں 2منٹ میں آئی بس
میں چپکے سے کمرے میں گیا دیکھا تو وہاں فرش پر کارپیٹ بچھی ہوئی تھی اور ایک طرف باجی کے جہیز کے صوفے رکھے تھے اور بھی کچھ سامان رکھا ہوا تھا پھر سے میرا دل زور زور سے دھڑکنے لگا خیر باجی کمرے میں آئی اور جلدی سے دروزہ لاک کردیا اور بولی

یار ہمارے پاس ٹائم کم ہے یہ جگہ زیادہ سیف نہیں ہے،،،،

امی کا تو مسئلہ نہیں ہے وہ اوپر نہیں آسکتی مگر حمیرا کا تھوڑا ڈر ہے اور تم کو جلدی نیچے جانا ہوگا ورنہ کسی کو شک بھی ہو سکتا ہے،،،،

یہ کہتے ہی باجی نے میری طرف دیکھتے ہوئے ایک  سیکسی سی سمائل دی اورپھر مجھے اپنی طرف کھینچا اور پوری طاقت سے مجھے بانہوں میں جکڑ لیا......

پہلی بار مجھے ان کےجسم کا صحیح احساس ہوا ان کے مموں کو اپنے سینے پر محسوس کیا جو کافی بڑے تھے میں نے بھی زور سے انکو بھینچ لیا اور جلدی سے ان کے منہ پر kissکردی انہوں نے بھی مجھے کس کرنا شروع کر دیا پہلے گال پھر ماتھا اور پھر سیدھا میرے ہونٹوں کو چوما میرے اندر سرسری سی آگئ پھر میں نے انکے ہونٹوں کو پورا اپنے منہ میں بھر لیا


 اففففففففف انکے منہ کی کیا خوشبو تھی سانسیں مہک رہی تھیں بڑا ہی سیکسی ٹیسٹ تھا میں ہونٹوں سے ہوتا ہوا اپنی زبان کو ان کے منہ میں لے گیا اور انکی زبان کو اپنے ہونٹوں سے چوسنے لگا ہم دونوں کو ایسا نشہ چڑھا کی کچھ ہوش ہی نہ رہی میں نے اپنا ایک ہاتھ باجی کی گانڈ پر پھیرنا شروع کردیا دوسرا ہاتھ ان کے مموں پر وہ پاگل سی ہونے لگی اور آہ آہ آہ کی ہلکی آوازیں نکالنے لگے دورسرے ہی پل انہوں نے اپنے ہاتھ کو میرے لنڈ کی طرف کرکے لنڈ کو ٹٹولنا شروع کردیا میرا لنڈ تو کس کرنے سے ہی پورا اکڑ گیا تھا میں نے پینٹ کی زپ کھولی اور لنڈ کو باہر نکال دیا باجی نے لنڈ کو پکڑتے ہی سہلانا شروع کردیا میرا لنڈ فل ٹائٹ ہو چکا تھا باجی نے فوراً اپنی شلوار نیچے گرائی اور ایک ٹانگ سے شلوار نکال لی دوسری ٹانگ میں شلوار ویسے ہی لٹکی رہنے دی اور فوراً صوفے پر لیٹ گئ اور مجھے اوپر آنے کا اشارہ کیا میں نے اپنی پینٹ کو ڈھیلا کیا اور آدھی پینٹ نیچے کردی اور صوفے پر سیدھا ان کی چوت کے سامنے بیٹھ گیا باجی نے اپنی ایک ٹانگ کو پھیلایا جس سے انکی چوت صاف نظر آنے لگی جس پر ہلکے ہلکے بال تھے مگر الگ طرح سے چمک رہی تھی چوت کے پاس والی جگی ہلکی سی کالی تھی میں نے ایک سیکنڈ میں اپنا ہاتھ ان کی ملائم سی چوت پر رکھا اور اپنی انگلی سے ٹچ کیا وہ پھر سے تھوڑا اچھلی
پھر میں نے انگلی سے چوت کے منہ کو کھولا اندر سے چوت ہلکی گلابی رنگ کی تھی اور اس وقت چوت سے ہلکا ہلکا سا سفید رنگ کا لیس نکل رہا تھا جس کی وجہ سے چوت اور حسین لگ رہی تھی یہ پہلی بار تھا جب میں نے چوت کو اتنے قریب سے دیکھا اور اپنی انگلی سے ٹچ کیا جیسے ہی میں نے انگلی ٹچ کی تو میری انگلی پر وہ سفید لیس لگا اور پھر میں نے اپنی انگلی کو اپنی ناک. کے پاس لاکر سونگھا  باجی فوراً تھوڑا چونکی اور پوچھنے لگی یہ کیا کررہے ہو میں نے کہا آپکی چوت کی خوشبو سونگ رہا تھا،، انہوں نے اس وقت عجیب نظروں سے مجھے دیکھا اور آنکھیں بند کرلیں،،،، خیر کیا مست خوشبو ہے دل کیا چاٹ لوں پر ڈر تھا تھوڑا دل میں اس لیے نہیں چاٹا کہ پتہ نہیں یہ کیسا لیس ہے مگر میری سب سے بڑی خواہش تھی کہ میں چوت کو اپنے منہ سے چوسوں...  باجی نے مجھے اشارہ کیا کے لنڈ کو ڈالوں اندر تو میں اور قریب آیا باجی کی دوسری ٹانگ کو بھی تھوڑا پھیلایا اور اپنے لنڈ کو سیدھا چوت پر رکھا باجی نے کہا یاسر تھوڑا سا تھوک لگاؤ پہلے اور پھر  آرام آرام سے ڈالو پلیز زور سے نہیں ڈالنا تو میں نے آہستہ سے ٹوپی پر تھوک لگا کر اندر کی باجی تھوڑی اوپر کی طرف کھسک گئ میں نے پوچھا کیا ہوا بولی کچھ نہیں ہلکا سا درد ہے پر تم ڈالو خودی ٹھیک ہوجائے گا میں نے پھر ٹوپی کو اور اندر کیا اب لنڈ کافی اندر چلا گیا پر پورا نہیں گیا تھا باجی کی ہلکی سی آہ نکلی اور انہوں نے اپنے دونوں ہاتھوں کو میری کمر پر کس لیا اور مجھے کمر سے پکڑ کر اپنی طرف کھینچا اسی پل میں نے نیچے سے زور ڈالا اور پورا لنڈ چوت میں گھسا دیا باجی نے زور سے افففففففففففففف کی آواز نکالی اور کہا ایک منٹ ایسے ہی رہو ہلنا نہیں میں رک گیا اور وہ اپنی گردن کو دائیں بائیں کرنے لگی اور بری طرح مچلنے لگی دوسرے لمحہ ہی کہا چلو اب ہلکےہلکے اندر باہر کرو میں سٹارٹ ہو گیا چوت سے مسلسل سفید لیس رس رہا تھا اور انکی چوت بے حد چکنی ہورہی تھی میں نے آہستہ آہستہ لنڈ کی سپیڈ بڑھائی اور باجی کی آہیں تیز ہونے لگی آہ آہ آہ آہ اففففف
کرو زور سے اور زور سے آہ آہ
ان کی ان آوازوں نے میرے اوپر عجیب اثر کرنا شروع کردیا میں اور تیز ہوتا گیا اور چھوٹنے کے قریب آراہا تھا میں نے باجی کو کہا میرا پانی آنے والا ہے اس نے کہا آنے دو پانی تیز کرو بس اور میری سپیڈ مزید تیز ہوئی ایک دم میرا جسم اکڑنے لگا اسی لمحے باجی کا جسم بھی اکڑا انہوں نے مجھے پوری طاقت سے جکڑا ہوا تھا اور میری منی نوک پر آگئ میں پیچھے ہٹنا چاہا تو باجی نے کہا میرے اندر چھوڑ دو اپنا مال میں تھوڑا ڈر سا گیا وہ پھر بولی پلیز مال اندر چھوڑو مجھے سکون دے دو اسی پل میرے لنڈ سے منی کا فوارہ چھوٹنے لگا اور میرے جسم میں پہلی بر عجیب قسم کا اکڑاؤ ہوا اور میں پوری طرح سے باجی کے اندر فارغ ہوگیا اور انکے اوپر گر گیا باجی آنکھیں بند کرے بے سد پڑی تھیں انکی بس سانسوں کی آواز آراہی تھی اور دل زور زور سے دھڑک رہا تھا یہ میرا بھی حال تھا 2منٹ ہم ایسے ہی پڑے رہے پھر اچانک باجی نے آنکھیں کھولی اور مجھے زور سے ہونٹوں پر کس کرنے لگی... تھینکس یاسر تم نے مجھے سکون دے دیا کب سے ترس رہی تھی میں اس سکون کے لیے.... تھینکس میری جان تم بہت ٹائٹ مرد ہو.....

یہ سن کر. مجھے بہت اچھا محسوس ہونے لگا کے چلو انکو میں نے آج صحیح مزہ تو دیا اگلے ہی پل میں اٹھا اور پاس پڑے کپڑے سے اپنے لنڈ کو صاف کرنے لگا میری منی اس وقت بھی ہلکی ہلکی سی سوراخ سے آرہی تھی... میں نے لنڈ صاف کیا اپنی پینٹ اوپر کی بال صحیح کیے اور صوفے پر بیٹھ گیا باجی اب بھی ٹانگیں پھیلائے ویسے ہی پڑی تھیں پھر انہوں نے مجھسے وہ ہی کپڑا مانگا اور اس کپڑے سے اپنی چوت کو صاف کرنے لگی میں نے دیکھا میری منی اور باجی کی چوت کا لیس مکس ہوکے نیچے بہہ رہا تھا اور صوفہ کافی گیلا ہوگیا تھا باجی نےسپیڈ سے اپنی چوت اور پھر صوفے کو صاف کیا اور کھڑی ہوکر اپنی شلوار اوپر چڑھائی پھر اپنے مموں کو اور قمیض کو سیٹ کیا بالوں کو سیٹ کیا اور مسکراتے ہوئے باہر چلنے کا اشارہ دینے لگی.... ہم دونوں باہر آئے باجی فوراً سیڑھیوں کی طرف لپکی اور نیچے جھانک کر دیکھا سب نارمل لگا پھر وہ کہنے لگی کی مشین بلکل ٹھیک ہے میں نے خود ہی پائپ نکالا تھا تم اب نیچے جاؤ اور بولنا ٹھیک کردی ہے میں اب کپڑے دھوتی ہوں ورنہ امی پوچھےنگی....
دوکان جاکر میسج کرنا پھر بات کرینگے....
میں جلدی سے نیچے بڑہا آنٹی اب بھی کچن میں تھیں سب نارمل لگا آنٹی نے دیکھا تو ہاں بیٹا چل گئ مشین میں نے کہا جی آنٹی اب سیٹ ہے باجی کپڑے ڈال رہی ہیں اچھا بیٹا بہت شکریہ تمہارے خوش رہو ہمیشہ.... میں اندر ہی اندر ہونٹوں پر مسکراہٹ لیے نیچے کی طرف چل دیا اور دل میں سوچا آنٹی کو کیا پتہ میں تو ان کی بیٹی کو چود کر آرہا ہوں.....

میں نے کچھ دیر گھر میں آرام کیا اور پھر واپس دوکان چلا آیا اور اپنے کاموں میں مصروف ہوگیا کچھ دیر بعد فرصت ملی تو دماغ میں ایک بات آئی جس کو سوچ کر میں تھوڑا پریشان ہوگیا اور تبھی میں نے گڑیا باجی کو میسج کیا.....

باجی کیا کر ہی ہو

کچھ نہیں ابھی کاموں سے فارغ ہوئی تو لیٹی ہوئی تھی بولو کیا ہوا...

وہ باجی ایک بات ذہن میں آئی اسی لیے پوچھنے کہ لیے میسج کیا ہے...


ہاں بولو کیا ہوا کونسی بات ہے...

باجی جب ہم سیکس کر رہے تھے اس وقت آپنے مجھے کیوں کہا کے اپنا پانی اندر گراؤ اگر بچہ ہوگیا تو پھر کیا ہوگا آپ تو پریگننٹ ہوجاؤگی اب....

ارے یار تم اسکی ٹینشن مت لو جانی میں اسکا حل جانتی ہوں مجھے بھی پتہ ہے اس کو روکنے کہ لیے بہت سے میڈیسن ہوتی ہیں میں وہ استعمال کرلونگی مگر ہم جب بھی ملیں گے تم اپنا مال. میرے اندر ہی گرانا پلیز وعدہ کرو ابھی....


میڈیسن سے پکا بچہ نہیں ہوگا نا مجھے تھوڑا ڈر لگ رہا تھا اس لیے آپسے پوچھا اور میرا وعدہ ہے بس جیسا آپ بولوگی میں کرونگا بس مجھے آپکے ساتھ سیکس کرنا ہے ہر روز کسی بھی طرح مجھے آپنے جو سکون دیا ہے وہ میں بتا نہیں سکتا باجی اب تو ہر وقت آپکے بارے میں سوچتا ہوں اور اب آپکے بنا رہا نہیں جائگا....

ھھھھھھھھ اف او میری جان تم تو 2 بار میں ہی میرے دیوانے ہوگئے ہو اور ٹینشن مت لو میں نے بھی روز تمہارہ وہ اپنے اندر لینا ہے مجھے بھی تم نے خوش کردیا بہت ترسی ہوئی تھی میں کتنے ٹائم بعد مجھے سیکس کا مزہ ملا ہے اور تمہاری ٹوپی بھی کمال کی ہے میری جان نکال  دیتی ہے....

بس باجی اب سے میں اور میری ہر چیز آپکی ہے مجھے بس آپ چاہئے ہو ہر وقت... اچھا رات میں آجاؤں کیا... بتائیں

ھھھھھھھ پاگل ابھی تو کیا ہےتم نے اب پھر چاہئے رات میں...اچھا رات میں صورتحال دیکھوں گی پھر بتاؤں گی آج بابا بھی گھر ہی ہونگے انکی ڈیوٹی نہیں ہے آج.....

ارے یار پھر تو آج مشکل ہوگا ہم نہیں کر پائیں گے...

ارے دل چھوٹا مت کرو دیکھتی ہوں میں کوئی طریقہ سوچتی ہوں،،،اچھا تم یہ بتاؤ تمکو میرا جسم کیسا لگا....


اف باجی کیا پوچھ لیا آپنے آپکا جسم تو ریشم کی طرح ہے اتنا نرم. ملائم مت پوچھیں اور آپکا سینہ تو قیامت ہے....

ھھھھھھہ پاگل اسکو سینہ نہیں کچھ اور کہتے ہیں....

کیا کہتے ہیں باجی بتائیں...

اچھا تم تو بلکل ننے بچے ہونا تم کو نہیں پتہ جیسے میں جانتی ہو تمکو سب پتہ ہے. چلو تم بتاؤ پہلے....

باجی ہم. لڑکے تو اسکو ممے بولتے ہیں...


ھھھھھھھھہ اچھا تم یہ ہی بولو ویسے تو بریسٹ کہتےہیں پر ممے بھی ٹھیک ہے... اچھا نیچے والی کو کیا کہتے ہو بتاؤ...

باجی اسکو تو چوت کہتے ہیں نا.....

اففففففف جانی... ہاں چوت کہتے ہیں اور اپنے اس کو کیا کہتےہو وہ بھی بتادو.


ھھھھھھھھہ اسکو تو لنڈ کہتے ہیں کوئی لوڑا بھی کہتا ہے...

اففففففففففف

کیا ہوا باجی..

کچھ نہیں بس مجھے تمہارہ لنڈ یاد آگیا پھر سے گیلی ہونے لگی ہوں.....

ھھھھہ آجاؤں کیا ابھی

چپ پاگل ہر وقت سیکس کے چکر میں رہتے ہو تم رات میں کچھ کرتی ہوں پھر مجھے جم کر اور دیر تک کرنا میری چوت کو دیر تک چاہیے ہوتا ہے لنڈ اور تیز تیز کرنا اب پھر تم کو ایسا مزہ دونگی کے تم نے کبھی سوچا بھی نہیں ہوگا...


افففففف باجی آپکی باتوں سے میرا لنڈ کڑک ہوگیا ہے ابھی سے.. اور ایسا کونسا مزہ دینگی آپ چوت کہ علاوہ بھی کچھ الگ مزہ ہوتا ہے کیا..


ہاں ہوتا ہے سیکس میں الگ الگ طرح سے مزہ ہوتا ہے میں تمکو سب مزہ دونگی تمہارے لنڈ کو کس کرونگی تم تو بےہوش ہی ہوجاؤگے....

کیا باجی سچ میں آپکو گندا نہیں لگےگا کیا میں تو ایسا سوچ بھی نہیں سکتا تھا اگر آپ کسس کروگی تو پھر میں بھی آپکو وہاں کسس کرونگا..

ہاں میں کسس بھی کرونگی اور اسکی ٹوپی اپنے منہ میں بھی لی لونگی.......

افففففففف باجی میں تو مر ہی جاؤگا پھر

چل پاگل ایسا نہیں بولتے کچھ نہیں ہوگا بس تم کو الگ قسم کا مزہ آیگا اور منہ میں لینے سے لنڈ اور ٹائٹ ہوتا ہے پھر جب تم. چوت میں ڈالوگے تو مجھےاور بھی مزہ آیگا... اور تم نے کیا کہا تم بھی کسس کروگے چوت پر....

ہاں باجی میں آپکی چوت پر کسس کرونگا میں نے فلموں میں دیکھا ہے اس طرح لڑکی کو زیادہ مزہ آتا ہے نا...لڑکا اپنی زبان سے چوت کو چاٹتا ہے اور کچھ تو زبان اندر ہی ڈال دیتے ہیں

اففففففف میری جان تم نے کیا بول دیا میری چوت نے تو پانی چھوڑ دیا ہے کیا تم سچ میں  کروگے یہ تم کو گندہ نہیں لگے گا

نہیں باجی میرا بہت دل کرتا ہے چوت کو چاٹنے کا میں کرونگا قسم سے کچھ گندا نہیں لگے گا آپکی چوت کے پانی سے تو اتنی اچھی خوشبو آرہی تھی....

اففففففف جانی میں تمہاری باتوں سے ہی فارغ ہوگئ ہوں روکو اب باتھ روم سے آتی ہوں پوری شلوار بھیگ گئ ہے...

ھھھھھھھھہ اچھا جائیں آپ پر رات کا پلیز کچھ سوچیں اور جلدی بتائیں میں بے صبری سے انتظار کرونگا....

اچھا ٹھیک ہے چلو بعد میں بات کرتی ہوں.


اسکے بعد میرے اور گڑیا باجی کے بیچ سیکس اور چدائی کا ایسا سلسلہ شروع ہوا جس نے ہم دونوں کو پاگل کرکے رکھ دیا ہم نے تقریباً 8 مہینے ہر دن کسی نا کسی طرح سے سیکس کیا اور اس دوران میرے ساتھ بڑا کچھ ہوا میری زندگی میں گڑیا باجی کی وجہ سے اور بھی خواتین آئیں جنکو بھی میں نے خوب چودا اور مزہ لیا

جاری ہے

لکھاری نے کہانی یہاں تک لکھی ہے اگر کوئی اسے آگے مکمل کرنا چاہے تو لکھ کر بھیج سکتا ہے

Posted on: 06:13:AM 01-Jan-2021


0 0 182 0


Total Comments: 0

Write Your Comment



Recent Posts


Hello Doston, Ek baar fir aap sabhi.....


0 0 19 1 0
Posted on: 06:27:AM 14-Jun-2021

Meri Arrange marriage hui hai….mere wife ka.....


0 0 15 1 0
Posted on: 05:56:AM 14-Jun-2021

Mera naam aakash hai man madhya pradesh.....


0 0 14 1 0
Posted on: 05:46:AM 14-Jun-2021

Hi friends i am Amit from Bilaspur.....


0 0 76 1 0
Posted on: 04:01:AM 09-Jun-2021

Main 21 saal kahu. main apne mummy.....


1 0 59 1 0
Posted on: 03:59:AM 09-Jun-2021

Send stories at
upload@xyzstory.com